0

چین میں غیر ملکی سرمایہ کاری میں اضافہ

چین کی قومی تجارتی ورکنگ کانفرنس میں وزارت تجارت کے اہلکار نے تیس تاریخ کو کہا کہ رواں سال جنوری سے نومبر تک ملک بھر میں غیر ملکی سرمایہ کاری کی مجموعی مالیت آٹھ کھرب پینتالیس ارب چورانوے کروڑ چینی یوان تک جاپہنچی ہے، جس میں گزشتہ برس کی اسی مدت کے مقابلے میں چھ فیصد کا اضافہ ہوا ہے۔

وزارت تجارت کے اہلکار کے مطابق گزشتہ گیارہ مہینوں کے دوران چین میں غیر ملکی سرمایہ کاری کے حوالے سے دس کروڑ امریکی ڈالرز مالیت سے زائد کے منصوبوں کی تعداد سات سو بائیس رہی، جس میں گزشتہ برس کی اسی مدت کے مقابلے میں پندرہ اعشاریہ پانچ فیصد کا اضافہ ہوا ہے۔چین میں “دی بیلٹ اینڈ روڈ” منصوبے سے متعلق بتایا گیا کہ اس منصوبے سے وابستہ ممالک اور آسیان کی جانب سے سرمایہ کاری کی مالیت میں بالترتیب تیئیس اعشاریہ پانچ فیصد اور ستائیس اعشاریہ تین فیصد کا اضافہ ہوا ہے۔

اہلکار کے مطابق گزشتہ کئی سالوں کی نسبت سال دو ہزار انیس کے دوران چین نے اصلاحات و کھلے پن کے حوالے سے سب سے زیادہ اقدامات کئے ہیں۔ جس سے غیر ملکی کاروباری اداروں کے اعتماد اور توقعات کو استحکام ملا ہے۔سال دو ہزار انیس کے دوران صارف منڈی مستحکم رہی۔ منڈی کے پیمانے کو مزید توسیع دی جارہی ہے۔ اندازہ ہے کہ رواں سال کے دوران مجموعی سالانہ کھپت کی مالیت پہلی مرتبہ چار سو کھرب چینی یوان تک جاپہنچے گی۔اہلکار کے مطابق معاشی ترقی کے لئے کھپت کے بنیادی کردار کو مزید مضبوط بنایا گیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں