0

افغان سفارتکار سنکیانگ میں ترقی و خوشحالی کے عینی شاہد

افغان وزارت خارجہ میں سیاسی امور کے شعبے کے سربراہ، چین میں تعینات سابق سفیر اور افغانستان – چین دوستی ایسوسی ایشن کے سربراہ سلطان احمد بہین نے حال ہی میں چائنا میڈیا گروپ کو دیے گئے ایک انٹرویو میں کہا کہ دہشت گردی افغانستان سمیت متعدد ممالک کو درپیش مشترکہ مسئلہ ہے۔

انہوں نے چین کی جانب سے انتہا پسند نظریات سے متاثرہ نوجوانوں کو پیشہ ورانہ تعلیم و تربیت کی فراہمی سمیت دیگر اقدامات کو بھرپور سراہا۔ سلطان احمد بہین نے کہا کہ ایسے اقدامات سے نوجوان معاشرے میں ضم ہو سکیں گے اور سنکیانگ میں ترقی سمیت دہشت گردی کی کارروائیاں بھی ختم ہو جائیں گی۔

افغان سفارتکار خود بھی کئی مرتبہ سنکیانگ کا دورہ کر چکے ہیں۔ اس حوالے سے انہوں نے بتایا کہ وہ سنکیانگ میں ترقی اور عوامی فلاح و بہبود کے خود عینی شاہد ہیں۔ سلطان احمد بہین نے مزید کہا کہ اُن کا پسندیدہ شہر کاشغر ہے جہاں انہوں نے بے شمار تبدیلیاں رونما ہوتے دیکھی ہیں۔

سلطان احمد بہین نے کہا کہ چین کے دوسرے صوبے بھی کاشغر کو حمایت فراہم کرتے ہیں اور کاشغر کے عوام کو بھی ترقی کے بہترین مواقع میسر ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کاشغر کے شہری خوشحال زندگی بسر کر رہے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں