0

معروف پاکستانی اداکارہ کا بھتیجا لندن میں اغواءکے بعد قتل

لندن (ویب ڈیسک) پاکستان کی معروف اداکارہ زیبا شہناز کے 27 سالہ بھتیجے محمد شاہ سبحانی کو لندن میں اغواءکے بعد قتل کردیا گیا۔سوشل میڈیا پر سماجی رہنما کی جانب سے زیبا شہناز کا ایک ویڈیو پیغام شیئر کیا گیا ہے جس میں وہ بھتیجے کے قتل سے متعلق تفصیلات بتاتے ہوئے شدید غمزدہ دکھائی دے رہی ہیں۔

نجی اخبار کے مطابق زیبا شہناز نے بتایا کہ 7 مئی سے لاپتہ محمد شاہ سبحانی خاندان کا لاڈلا والدین کا اتنا فرمانبردار لڑکا تھا جس کی ہم سب گواہی دے سکتے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ مقتول کی اغوا سے چار ماہ قبل ہی شادی ہوئی تھی۔زیبا شہناز کا کہنا ہے کہ سبحانی کی کسی سے دشمنی نہیں تھی وہ اپنے کام سے کام رکھتا تھا اورصرف جم جانے کا شوقین تھا۔

اداکارہ کا کہنا تھا کہ کچھ عرصہ قبل سبحانی نے کسی کو پیسے ادھار دیئے تھےجس کی واپسی کا وہ تقاضا کررہا تھا تاہم وہ لوگ دے نہیں رہے تھے۔زیبا شہناز کے مطابق قرض داروں کا رمضان کی پہلی تاریخ کو فون آیا کہ پیسے آکر لے جاﺅ جس کے بعد وہ والد کی گاڑی لے کر ان کے بتائے پتے پر روانہ ہوگیا لیکن اس کے بعد سے اس کا کوئی پتہ نہیں چلا اور موبائل فون بھی بند جارہا تھا۔اسکاٹ لینڈ یارڈ پولیس کے مطابق سبحانی ایک خاتون کے گھر پیسے لینے گیا تھا، قتل کے بعد بھتیجے کو وہیں جنگل میں دفنا دیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ لندن پولیس نے طویل جدوجہد کے بعد 67 سالہ خاتون کو بھارت جاتے ہوئے ایئرپورٹ سے گرفتار کیا اور پھر اس کی نشاندہی پر لاش برآمد کی اور دیگر ملزمان جن کی عمریں 19 سے 25 سال کے درمیان ہیں ان کو بھی گرفتار کرلیا گیا۔زیبا شہناز کا کہنا تھا کہ سبحانی کے ایک ماہ کی بیٹی ہے اور وہ اپنی شادی کے چار ماہ بعد لاپتا ہوگیا تھا، اس کی گولیوں سے چھلنی کار لاپتا ہونے کے چھ ہفتوں بعد برآمد کی گئی تھی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں