چین نے پاکستانیوں کے دل جیت لئے

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) 27 اگست کی صبح ، یی وو میونسپل پبلک سیکیورٹی بیورو کے ایگزٹ انٹری ایڈمنسٹریشن بیورو نے چین کی نئی ویزہ پالیسی کے تحت موزوں اہلیت کے حامل غیر ملکیوں کے پہلے “بیچ”کو” فرسٹ کلاس” رہائشی اجازت نامہ جاری کیا۔ویزہ حاصل کرنے والوں میں پاکستان کے رہائشی محمد عارف بھی شامل ہیں۔

محمد عارف نے چائنا ریڈیو انٹرنیشنل سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے چین کی نئی ویزہ پالیسی کو خوش آئند قرار دیا۔ ان کا کہنا تھا کہ چین کا پانچ سالہ ویزہ حاصل کرنے والا پہلا پاکستانی ہونا میرے لئے باعث اعزاز ہے۔محمد عارف یی وو شہر میں کاروبار سے وابستہ ہیں۔ وہ چین میں ایک دہائی سے زیادہ عرصے سے مقیم ہیں۔ ان کا کہنا تھا چین میں کاروبار کا ماحول بہت سازگار ہے۔

انہوں نے عوامی جمہوریہ چین کے قیام کی 70 ویں سالگرہ کے موقع پر ویزہ ملنے کو تحفے کے مترادف قرار دیا۔ انہوں نے کہا کہ چین میں پاکستان کے شہریوں کو بہت زیادہ عزت و احترام دیا جاتا ہے۔ ان کا کہنا تھا وہ اور ان کے ساتھی چین اور پاکستان کے کاروباری حلقوں میں تبادلوں کو وسعت اور فروغ دینے کے لئے چین پاکستان چیمبر آف کامرس کی تشکیل کے لئے کوشاں ہیں۔خیال رہے کہ اس پالیسی سے پہلے تاجروں کو صرف ایک سال کے لیے ویزا جاری کیا جاتا تھا۔

اس حوالے سے محمد عارف نے بتایا کہ مقامی حکومت نے 200 تاجروں کو 5 سال کام کا ویزا جاری کرنے کا وعدہ کیا تھا اور وہ اس پہلے بیچ کا حصہ تھے جس کو یی وو انتظامیہ نے ویزے جاری کئے۔ محمد عارف کے ساتھ ساتھ افغانستان، اردن اور عراق کے تین شہریوں کو نئی ویزا پالیسی کے تحت فرسٹ کلاس ورک پرمٹ دیا گیا۔

واضح رہے کہ یی وو صارفین کا سامان خریدنے کے حوالے دنیا کا سب سے بڑا مرکز ہے، جس کا علاقہ 47 لاکھ اسکوائر میٹرز پر ہے، یہاں 70 ہزار بوتھ ہیں اور مختلف اقسام کی 17 لاکھ اشیا فروخت کی جاتی ہیں۔اس کے علاوہ ہر سال بیرون ملک سے 4 لاکھ سے زائد تاجر یی وو آتے ہیں جبکہ 100 ممالک اور علاقوں سے آئے 13 ہزار سے زائد اوورسیز تاجر اس شہر میں رہتے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں