0

چینی وزارت خارجہ کا سنکیانگ سے متعلق امریکی بل پر احتجاج

چینی وزارت خارجہ اور سنکیانگ کی عوامی کانگریس کی قائمہ کمیٹی نے امریکی ایوان نمائندگان کے منظور کردہ “ویغور انسانی حقوق پالیسی بل 2019ء” کی شدید مذمت کی ہے۔وزارتِ خارجہ کی ترجمان خوا چھون اینگ نے کہا ہے کہ اس نام نہاد بل کے ذریعے سنکیانگ ویغور خود اختیار علاقے میں انسانی حقوق کی صورتحال کو بگاڑ کر پیش کرنے کی کوشش کی گئی ہے اور یہ چین کے اندرونی معاملات میں مداخلت ہے۔ انہوں نے امریکہ پر زور دیا کہ وہ اس بل کو قانون بننے سے روکے۔اسی حوالے سے معروف تجزیہ کار اور انسانی حقوق کے ماہر شفقت منیر کا کہنا ہے- دوسری جانب چینی نائب وزیر خارجہ چھن گانگ نے چین میں قائم امریکی سفارتخانے کے ناظم الامور ویلیئم کلین کو طلب کر کے اس بل کے حوالے سے شدید احتجاج ریکارڈ کروایا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں