0

چین ، یورپ تعاون کے دوسرے مکالمے کا انعقاد

چھونگ چھینگ(مانیٹرنگ ڈیسک )دو دسمبر کو چین کے جنوب مغربی شہر چھونگ چھینگ میں بو آؤ ایشیائی فورم کے تحت ایشیا – یورپ تعاون کےدوسرے مکالمے کا آغاز ہوا۔اکیس ممالک اور علاقوں، تین عالمی تنظیموں کے چارسو سے زائد نمائندوں نے اجلاس میں ایشیا – یورپ تعاون اور دی بیلٹ اینڈ روڈ سے متعلق بین الاقوامی تعاون پر تبادلہ خیال کیا۔

بو آؤ ایشیائی فورم کے چیئرمین بان کی مون نے نشاندہی کی کہ ایشیا اور یورپ کو باہمی تقلید اور باہمی تعلم کے ساتھ ایک دوسرے کی خوبیوں کا استعمال کرتے ہوئے نئے دور کی سائنس و ٹیکنالوجی کے انقلاب کی طرف آگے بڑھنا چاہیئے۔ انہوں نے کہا کہ ایشیا بڑی تیزی سے ابھر رہا ہے اور کچھ شعبوں میں قیادت کر رہا ہے۔ چین، بھارت، جاپان اور جنوبی کوریا نے مصنوعی ذہانت، بگ ڈیٹا، انٹرنیٹ آف تھنگز، سمارٹ شہر اور انٹیلی جنٹ مینوفیکچرنگ سمیت دیگر کئی شعبوں میں سرمایہ کاری کو بڑھایا ہے۔ اس کے ساتھ ساتھ یورپ نے بھی جدت کاری اور ٹیکنالوجی کی قیادت میں ترقیاتی حکمت عملی اختیار کی ہے۔ شرکا نے دی بیلٹ اینڈ روڈ کی تعمیر کے لیے دیگر تجاویز بھی پیش کیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں