0

ہانگ کانگ کے سماجی حلقوں کا پُرتشدد کارروائیوں کو روکنے کا عزم

ہانگ کانگ(مانیٹرنگ ڈیسک )چودہ نومبر کو برازیلیا میں ہانگ کانگ امور کے حوالے سے چینی صدر نے چینی حکومت کا واضح اور دو ٹوک مؤقف پیش کیا۔ہانگ کانگ کے سماجی حلقوں نے شی جن پھنگ کے اس بیان کے حوالے سے رائے دیتے ہوئے کہا کہ چینی صدر کا یہ بیان ہانگ کانگ خصوصی انتظامی علاقے کی حکومت کی جانب سے تصادم کو روکنے کی کوششوں کی حمایت کرنے کے سلسلے میں ہانگ کانگ کے عوام کی رہنمائی کرے گا ۔

ہانگ کانگ کے اخبار ٹاکونگ باؤ نے اپنے اداریے میں لکھا کہ مرکزی حکومت نے خصوصی انتظامی علاقے کی حکومت کی حمایت کا جو اظہار کیا ہے وہ اس بات کا ثبوت ہے کہ مرکزی حکومت ایک ملک دو نظام کا احترام اور خصوصی انتظامی علاقے کی حکومت پر اعتماد کرتی ہے۔ تصادم کو روکنا ایک بھاری ذمہ داری ہے جو ہانگ کانگ کی انتظامیہ ، قانون ساز اداروں اور عدلیہ کے اداروں کی مشترکہ کوشش سے ہی ادا کی جا سکے گی۔اخبار وین ہوئی باؤ کے اداریے میں کہا گیا کہ صدر شی جن پھنگ نے مرکزی حکومت کی جانب سے ہانگ کانگ میں فسادات کو روکنے کے لیے واضح ہدایات پیش کی ہیں جس سے ہانگ کانگ کے مختلف حلقوں کا یہ عزم پختہ ہوا ہے کہ وہ اتفاق و اتحاد سے ہانگ کانگ کو اس بحران سے بچا سکیں گے۔ چینی صد رکے بیان میں یہ پیغام بھی واضح ہے کہ چین مختلف مسائل پر اپنے بنیادی اصولوں سے ایک قدم بھی پیچھے نہیں ہٹے گا ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں