کرفیو کے باوجودکشمیرمیں مظاہرے جاری

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک )مقبوضہ کشمیرمیں جاری بھارتی مظالم کے باعث مقبوضہ وادی کو جیل میں تبدیل کردیاگیاہے۔نجی ٹی وی اے آروائی سے گفتگو کرتے ہوئے کشمیر سے تعلق رکھنے والی سینئرصحافی نعیمہ احمد مہجور کہتی ہیں کہ مقبوضہ کشمیرمیں احتجاجی مظاہرے جاری ہیں،لداخ کے لوگ بھی بھارتی فیصلے سے خوش نہیں ہیں جبکہ کارگل میں بھی بھارتی حکومت کے خلاف مظاہرے ہوئے۔انہوں نے بتایا کہ جیلوں میں قید کشمیریوں کی حالت انتہائی نازک ہے،شدید سردی میں انہیں ناکافی سہولیات فراہم کرکے اذیت دی جا رہی ہے۔تجارت، تعلیم اوردیگرمعاملات زندگی کرفیو کے باعث انتہائی تشویشناک صورتحال کا شکار ہیں۔

یاد رہے پانچ اگست کومقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت کا خاتمہ کرکے مودی حکومت نے لاکھوں کشمیریوں سے ان کی شناخت چھیننے کی ناکام کوشش کی ہے اور اب مظاہروں اور کشمیریوں کے ردعمل کے ڈر سے وادی کو جیل میں تبدیل کررکھاہے۔مقبوضہ کشمیرمیں نو لاکھ فوج تعینات کی ہوئی ہے ،کرفیو کے باعث بنیادی ضرورت کی اشیا اور ادویات کا ملنا بھی مشکل ہوگیاہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں