0

آپ ذہنی تناؤ کا شکار ہیں؟ تو خوراک میں یہ تبدیلیاں کریں

خوراک کا انسان کی صحت سے براہ راست تعلق ہوتا ہے، آپ کیا کھاتے ہیں اس کا اندازہ صحت سے بخوبی لگایا جا سکتا ہے، اگر آپ اچھا کھائیں گے تو آپ کی صحت بھی بہتر ہوگی۔ماہرین کے مطابق ہم اچھی اور صحت مند خوراک کا استعمال کرکے ذہنی تناؤ یعنی “اسٹریس” کی کیفیت پر قابو پا سکتے ہیں۔

غذا میں صحت مند بنانے والی چیزوں کا استعمال کرکے اور وہ چیزیں جو صحت کے لیے مضر ہیں اُن کو خوراک سے نکالنے سے تناؤ کو کم کیا جا سکتا ہے۔ماہرین خوراک نے 4 ایسی غذائی تبدیلیاں بتائی ہیں جو کہ انسان کے اندر تناؤ کی کیفیت کو کم کرنے میں بہت مددگار ثابت ہوتی ہیں جبکہ ایسی غذا جو کہ صحت کے لیے مضر ہیں ان کا استعمال نا کرنے سے دباؤ کی کیفیت میں کمی لائی جا سکتی ہے۔
ماہرین خوراک نے یہ 4 غذائی تبدیلیاں بتائی ہیں جو کہ انسان کے اندر تناؤ کی کیفیت کو کم کرنے میں بہت مددگار ثابت ہوتی ہیں۔

پھل اور سبزیوں کا زائد استعمال:
ماہرین کا کہنا ہے کہ صحت کو بہتر بنانے کے لیے سب سے آسان چیز یہ ہے کہ آپ مختلف اقسام کی سبزیاں اور پھلوں کے استعمال کو بڑھا دیں۔

ہر روز 5 مختلف رنگ کی سبزیاں کھانے کی کوشش کریں اس لیے کہ ہمارے جسم میں پائے جانے والے گڈ بیکٹیریا کے لیے کم سے کم پروسیس شدہ کھانے بہترین ہیں کیونکہ یہ فائبر سے مالا مال ہوتے ہیں۔

چینی کے استعمال سے گریز کریں:
اگر آپ تناؤ اور دباؤ کی کیفیت میں مبتلا ہیں اور آپ یہ سمجھتے ہیں کہ آئس کریم یا کچھ میٹھا کھانے سے یہ کیفیت فوراً ٹھیک ہوجائے گی تو یہ بالکل غلط ہے۔

جب آپ چینی کا بہت زیادہ استعمال کرتے ہیں تو آپ کا جسم اضافی گلوکوز جذب کرنے اور خون میں شوگر کی سطح کو منظم کرنے کے لیے انسولین بناتا ہے جس کی وجہ سے جسم کا نظام کہیں نہ کہیں متاثر ہوتا ہے اور اس وجہ سے انسان تھکن اور تناؤ محسوس کرنے لگتا ہے۔

کیفین کا استعمال کم کریں:
کیفین چائے، کافی اور چاکلیٹ میں زیادہ مقدار میں پائی جاتی ہے۔ کیفین کا زیادہ استعمال آپ کی نیند متاثر کر سکتا ہے جس کی وجہ سے انسان چڑ چڑا پن اور تناؤ کا شکار ہوجاتا ہے۔

اگر آپ کو محسوس ہو کہ کیفین کا استعمال کرنے سے آپ کے جسم پر منفی اثرات مرتب ہورہے ہیں تو اچھا ہے کہ آپ اس کا استعمال نہ کریں یا آہستہ آہستہ اس کے استعمال کو کم کرنا شروع کردیں۔

بھوک اور تناؤ کا تعلق سمجھیے:
کبھی بھی کسی ایسی جگہ بھوکے مت جائیں جہاں آپ کو لگتا ہے کہ آپ پریشانی میں مبتلا ہوسکتے ہیں۔ کسی تناؤ بھری صورتحال میں اگر آپ خالی پیٹ جائیں گے تو یہ منفی جذبات کو بڑھا سکتا ہے۔

اگر آپ کسی ایسی جگہ جارہے ہیں جہاں دباؤ اور تناؤ کی کیفیت پیدا ہوسکتی ہے تو اپنے ساتھ کچھ ایسے اسنیک رکھیں جس کو کھانے سے صحت متاثر نہ ہو۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں