0

خیبرپختونخوا میں پولیو کے 2 نئے کیس سامنے آگئے

پشاور (مانیٹرنگ ڈیسک )محکمہ صحت کے مطابق پولیو کیسز سرائے نورنگ ضلع لکی مروت سے رپورٹ ہوئے جہاں 7 سال کی بچی اور 21 ماہ کے بچے میں پولیو وائرس کی تصدیق ہوئی۔ محکمہ صحت کا کہنا ہے کہ متاثرہ بچی کو حفاظتی پولیو کے قطرے نہیں پلائے گئے تھے۔محکمہ صحت کے مطابق دو نئے کیسز کے بعد رواں سال کے دوران خیبرپختونخوا میں پولیو سے متاثرہ بچوں کی تعداد 56 ہوگئی ہے جبکہ ملک بھر میں پولیو کیسز کی تعداد 70 تجاوز کرچکی ہے۔محکمہ صحت کا کہنا ہے کہ پولیو کیسز کی بڑی وجہ والدین کا بچوں کو حفاظتی قطرے پلانے سے انکار ہے۔واضح رہے کہ پاکستان کا شمار دنیا بھر میں گنتی کے ان چند ممالک میں ہوتا ہے جہاں پولیو کا مرض اب بھی موجود ہے جس کےخاتمے کیلئے حکومتی سطح پر بھر پور اقدامات کیے جارہے ہیں۔پاکستان میں پولیو ویکسین کے حلال یا حرام ہونے کے حوالے سے پائی جانے والی افواہوں کی وجہ سے انسداد پولیو پروگرام میں مشکلات پیش آتی ہیں اور بعض والدین اپنے بچوں کو پولیو کے قطرے پلانے سے ہچکچاتے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں