0

ریسٹورینٹ مالکن کا منیجر کی انگریزی پر مذاق اڑانے کی ویڈیووائرل، صارفین کی تنقید

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر) ایک مہنگے ریستوران کی مالکن خواتین کی جانب سے اپنے منیجر کی انگریزی کا مذاق اُڑانے کی ویڈیو وائرل ہوگئی اور سوشل میڈیا صارفین کی جانب سے اس رویے پر کڑی تنقید کی جارہی ہے۔

اسلام آباد میں ایک مہنگے ریستوران کنولی کی مالک خواتین کی جانب سے ایک ویڈیو شیئر کی گئی جس میں وہ اپنےمنیجر کا تعارف کروارہی ہیں اور اس سے انگریزی میں بات کرتے ہوئے پوچھتی ہیں کہ اسے ریستوران میں کام کرتے ہوئے کتنا عرصہ ہوگیا ہے اور اس دوران کتنی انگریزی سیکھی ہے۔


جواب میں منیجرانگریزی میں بات کرنے کی کوشش کرتا ہے اور زیادہ بات نہیں کرپاتا جس پر دونوں خواتین اس پر ہنستی ہیں جس پرمنیجر جھینپ جاتا ہے۔اس ویڈیو کے منظر عام پر آنے کے بعد سوشل میڈیا میں خواتین کے اس رویئے کو اپنے ملازم کو ہراساں کرنے کے مترادف قرار دیا جارہا ہےا ور اس کے علاوہ اسے طبقاتی امتیاز اور کم تعلیم یافتہ افراد کی تضحیک کے طور پر بھی دیکھا جارہا ہے۔

ریستوران مالکن خواتین کی جانب سے ایک مبینہ معذرت نامہ بھی سوشل میڈٰیا میں گردش پر ہے جس میں کہا گیا ہے کہ وہ صرف مینیجر سے مذاق کررہی تھیں اور ان کا مقصد اس کی توہین یا تضحیک کرنا نہیں تھا۔


اس پر ایک سوشل میڈیا صارف کا کہنا ہے کہ ویڈیو کے مطابق منیجرگزشتہ نو برس سے اس ریستوران میں کام کررہا ہے لیکن اس کی کام سے لگن اور محنت کو نظر انداز کرکے صرف انگریزی زبان میں اس کی مہارت نہ ہونے پر تضحیک کرنے کو مذاق قرار نہیں دیا جاسکتا۔

اس واقعے پر تبصرہ کرنے والوں میں سے بعض کا خیال یہ ہے یہ ریستوران کی شہرت کے لیے رچایا گیا ڈراما ہے اور جلد ہی یہ دونوں معافی مانگ کر اپنے منیجر کی تعریف کرتی پائی جائیں گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں