0

امریکہ کی تائیوان کو اسلحے کی فروخت “ایک چین”کے اصول کی سنگین خلاف ورزی ہے،چینی دفتر خارجہ

چین نے کہا ہےکہ امریکہ کی جانب سے تائیوان کو اسلحے کی فروخت “ایک چین”کے اصول اور چین۔ امریکہ کے مابین طے شدہ تین مشترکہ اعلامیوں کی سنگین خلاف ورزی ہے۔ چین کی وزارت خارجہ کے ترجمان وانگ وین بین نے ذرائع ابلاغ کے نمائندوں کو بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ یہ اقدام چین کے داخلی امور میں مداخلت اور چین کے اقتدار اعلی اور سلامتی مفادات کے لیےسنگین طور پر نقصان دہ ہے ۔ان کا کہنا تھا کہ امریکی فعل سے تائیوان میں علیحدگی پسند قوت کو غلط اشارہ دیا گیا ہے جبکہ چین ۔امریکہ تعلقات اور آبنائے تائیوان کے امن و امان کو شدید نقصان پہنچا ہے۔ترجمان کا کہنا تھا کہ چین اس اقدام کی بھرپور مخالفت کرتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ چین اپنے اقتدار اعلی اور سلامتی مفادات کے تحفظ کی خاطر تمام لازمی اور جائز اقدامات اختیار کرے گا۔ واضع رہے امریکہ نے گذشتہ روز چین کے صوبے تائیوان کو مزید 2ارب 40 کروڑ ڈالرز مالیت کا میزائل سسٹم فروخت کرنے کی منظوری دی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں