فوج کا ملک میں کسی بھی سیاسی عمل سے براہ راست یا بالواسطہ کوئی تعلق نہیں: عسکری قیادت

عسکری قیادت نے نیشنل ایکشن پلان پر تیز تر اور موثر عملدرآمد پر زور دیتے ہوئے کہا فوج کا ملک میں کسی بھی سیاسی عمل سے براہ راست یا بالواسطہ کوئی تعلق نہیں۔

آرمی چیف جنرل قمرجاوید باجوہ اور ڈی جی آئی ایس آئی کی پارلیمانی رہنماؤں سے ملاقات ہوئی جس میں گلگت بلتستان کے انتظامی امور پر بات چیت کی گئی۔ عسکری قیادت نے فوج کو سیاسی معاملات سے دور رکھنے پر اصرار کیا۔

عسکری قیادت کا کہنا تھا ضرورت پڑنے پر فوج ہمیشہ سول انتظامیہ کی مدد کرتی رہے گی، الیکشن ریفارمز، نیب، سیاسی معاملات میں فوج کا کوئی عمل دخل نہیں، اس حوالے سے یہ کام سیاسی قیادت نے خود کرنا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں