0

اللہ تعالی نے مسلمانوں کی توبہ قبول کر لی ۔۔۔سعودی حکومت نے مسجد حرام اور مسجد نبوی ﷺ کھولنے کا اعلان کردیا،رمضان المبارک کی سب سے بڑی خوشخبری دے دی گئی

ریاض (ویب ڈیسک) سعودی عرب کی حکومت نے 8 رمضان المبارک سے مسجد حرام اور مسجد نبوی ﷺ کھولنے کا اعلان کردیا۔سعودی عرب کی وزارت حج و عمرہ کی جانب سے 8 رمضان المبارک سے مسجد حرام اور مسجد نبوی ﷺ احتیاطی تدابیر کے ساتھ کھولنے کا اعلان کیا گیا ہے۔وزارت نے مسجد حرام اور مسجد نبوی ﷺ آن ےوالوں کیلئے گھر سے جاء نماز لانے کو ضروری قرار دیا ہے۔ مساجد میں داخلے سے قبل ہاتھوں کو سینیٹائز کرنا ہوگا ، سینیٹائزر حکومت کی جانب سے مہیا کیا جائے گا۔مسجد حرام اور مسجد نبوی ﷺ میں نمازیوں کے قرآن پاک کے نسخے استعمال کرنے کی بھی ممانعت ہوگی جبکہ نمازیوں کو آپسی فاصلہ یقینی بنانا ہوگا۔ نمازی گھروں سے وضو کرکے آئیں گے، دونوں مساجد کے واش روم اور وضوخانے بند رکھے جائیں گے ، نمازی ماسک لگا کر آئیں گے۔جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق متحدہ عرب امارات میں کورونا کے 552نئے کیسز سامنے آگئے، مزید 7افراد جاں بحق، تفصیلات کے مطابق متحدہ عرب امارات میں کورونا کے 552نئے کیسز رپورٹ ہوئے ہیں جس کے بعد مملکت میں کورونا سے متاثرہ افراد کی تعداد 12ہزار481ہوگئی ہے۔ مملکت میں اموات کی مجموعی تعداد 105تک پہنچ گئی ہے۔ اب تک ملک میں 2ہزار429افراد صحتیاب ہوکر گھروں کو جاچکے ہیں جبکہ 9ہزار947ایکٹو کیسز موجود ہیں جن میں سے 1مریض کی حالت تشویشناک ہے۔مملکت میں اب تک 11لاکھ 22ہزار سے زائد ٹیسٹس کیے جاچکے ہیں جبکہ مزید ٹیسٹس جاری ہیں۔ ملک میں لاک ڈاؤن میں مشروط نرمی کردی گئی ہے، شاپنگ مالز اور دکانیں کھل گئی ہیں جبکہ ریٹورینٹس بھی کھل گئے ہیں۔ دوسری جانب متحدہ عرب امارات میں کورونا وائرس کی وبا کے بعد کاروباری اور تجارتی مراکز اور تفریحی سرگرمیاں کئی ہفتوں سے بند ہیں، جس کے باعث لوگوں کی معاشی حالت خاصی خراب ہو چکی ہے۔لاک ڈاؤن کے باعث لوگ گھروں میں ہی بند ہو کر رہ گئے ہیں اور ان کے پاس کمانے کا کوئی ذریعہ نہیں ہے۔ ایسے وقت میں اماراتی ریاستوں کی جانب سے کاروباری طبقے کو پریشانی سے نکالنے کے لیے بہت سے امدادی پیکیج اور ریلیف دیئے جا رہے ہیں۔ اماراتی ریاست فجیرہ میں بھی مختلف شعبوں اور کاروبار سے جُڑے افراد کو بڑی خوش خبری سُنا دی گئی ہے۔ فجیرہ کے فرمانروا اور اماراتی سپریم کونسل کے ممبر شیخ حماد بن محمد الشرقی کی جناب سے ایک خصوصی فرمان جاری کیا گیا ہے، جس کے تحت متعدد شعبوں اور پیشوں کو 2020ء کے پورے سال کے لیے ٹیکس معاف کر دیا گیا ہے۔اس فرمان کے مطابق لوکل مارکیٹس، جمعہ بازار، پولٹری اور میٹ شاپس، ٹیلر شاپس، سینما ہاؤسز، تفریحی مقامات اور ہوٹلز اور شاپنگ مالز میں موجود تمام دُکانوں کو سال بھر کے لیے ٹیکس معاف کیا گیا ہے۔ اس کے علاوہ ہوٹلز اور ان میں واقع اپارٹمنٹس، ساحلی و تفریحی مقامات، فٹنس سنٹرز، ہیلتھ کلبز، شادی ہالز، خواتین کے بیوٹی سیلونز اورمردوں کے باربر شاپس کو بھی پورے سال کے لیے ٹیکس معاف ہو گا۔ شیخ حماد کی جانب سے تمام متعلقہ حکومتی اداروں کو اس رعایتی فیصلے کو فوری طور پر نافذ کرنے کی ہدایات جاری کی گئی ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں