0

پنجاب میں آلو کی قلت پیدا۔۔۔قیمتوں میں 150فیصد اضافہ پیدا ہوگیا، مہنگائی نے عوام کی کمر توڑ دی

ملتان (ویب ڈیسک) صوبہ پنجاب میں آلو کی قلت پیدا ہونے سے قیمتوں میں ڈیڑھ سو فیصد اضافہ ہو گیا جب کہ قیمتوں میں ہوشربا اضافے پر پنجاب حکومت بھی متحرک ہو گئی ہے۔ پنجاب حکومت نے صوبے بھر میں تعینات کمشنرز اور ڈپٹی کمشنرز کے نام جاری مراسلے میں آلو کی قیمتیں بڑھنےپر تشویش کا اظہار کیا ہے۔ مراسلے میں کہا گیا ہے کہ ماہ اپریل کے صرف 12 دنوں میں آلو کی قیمت فی کلو 36 روپے سے 60 روپے تک پہنچ گئی ہے۔ مراسلے کے مطابق افغانستان اور مشرق وسطیٰ کو بڑی مقدار میں آلو ایکسپورٹ کیا گیا جس سے قیمتوں میں اضافہ ہوا ہے۔ مراسلے میں یہ بھی بتایا گیا ہے کہ پنجاب میں گزشتہ سال کی نسبت آلو کی کاشت 8.84 فیصد کم ہوئی تھی۔ مراسلے میں کمشنرز اور ڈپٹی کمشنرز کو ہدایات جاری کی گئی ہیں کہ آلو کاشت کرنے والے کاشتکاروں سے رابطہ کر کے سپلائی اور قیمتوں میں توازن برقرار رکھنے کے لیے فوری اقدامات کیے جائیں۔ پنجاب حکومت نے صوبے بھر میں تعینات کمشنرز اور ڈپٹی کمشنرز کے نام جاری مراسلے میں آلو کی قیمتیں بڑھنے پر تشویش کا اظہار کیا ہے۔مراسلے میں کہا گیا ہے کہ ماہ اپریل کے صرف 12 دنوں میں آلو کی قیمت فی کلو 36 روپے سے 60 روپے تک پہنچ گئی ہے۔ مراسلے کے مطابق افغانستان اور مشرق وسطیٰ کو بڑی مقدار میں آلو ایکسپورٹ کیا گیا جس سے قیمتوں میں اضافہ ہوا ہے۔ مراسلے میں یہ بھی بتایا گیا ہے کہ پنجاب میں گزشتہ سال کی نسبت آلو کی کاشت 8.84 فیصد کم ہوئی تھی۔ مراسلے میں کمشنرز اور ڈپٹی کمشنرز کو ہدایات جاری کی گئی ہیں کہ آلو کاشت کرنے والے کاشتکاروں سے رابطہ کر کے سپلائی اور قیمتوں میں توازن برقرار رکھنے کے لیے فوری اقدامات کیے جائیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں