قومی ویمن ٹیم کی آل راؤنڈر عالیہ ریاض لاک ڈاؤن میں کس کو مس کر رہی ہیں؟ خود دل کی بات زبان پر لے آئیں

لاہور (ویب ڈیسک) عالمی وبا کورونا وائرس کے باعث ان دنوں دنیا بھر میں کھیلوں کی سرگرمیاں معطل ہیں۔ پاکستان ویمن کرکٹ ٹیم جو آئی سی سی کے پوائنٹس تقسیم کرنے کے فیصلے کی وجہ سے براہ راست آئی سی سی ویمنز کرکٹ ورلڈ کپ کے لیے کوالیفائی نہیں کر سکی،
اب جولائی میں کوالیفائنگ راؤنڈ کھیلے گی لیکن سرگرمیاں معطل ہونے کی وجہ سے ویمن کرکٹرز گھروں میں اور خود کو فٹ رکھنے کی انفرادی طور پر کوشش کر رہی ہیں۔ انڈیا نے گزشتہ برس پاکستان ویمن ٹیم کی میزبانی کرنے سے انکار کر دیا تھا، آئی سی سی ویمنز چیمپئن شپ کے 6 پوائنٹس پاکستان بھارت کی ویمن ٹیموں میں آئی سی سی نے یکساں تقسیم کرنے کا اعلان کیا ۔ بھارتی ویمن ٹیم ورلڈ کپ کے لیے کوالیفائی کر گئی جب کہ پاکستان نے کوالیفائنگ راؤنڈ کھیلنا ہے۔ آل راؤنڈر عالیہ ریاض پاکستان کی جانب سے 27 ون ڈے اور 42 ٹی ٹوئنٹی انٹر نیشنل میچز میں نمائندگی کر چکی ہیں۔ عالیہ ریاض پاکستان کی چند سینئر کھلاڑیوں میں سے ایک ہیں، انہوں نے 2014 میں اپنے کیرئیر کا آغاز کیا اور ان دنوں لاک ڈاؤن کی وجہ سے وہ واہ کینٹ میں اپنی فیملی کے ساتھ وقت گزار رہی ہیں۔ عالیہ ریاض کا کہنا ہے کہ میں ان دنوں کرکٹ گراؤنڈ اور ساتھی کھلاڑیوں کو سب سے زیادہ مس کر رہی ہوں، میری دعا ہے کہ جلد اس وبا سے نجات ملے اور کھیلوں کی سرگرمیاں بحال ہوں۔ انھوں نے کہا کہ ساتھی کھلاڑیوں کو بھی بہت یاد کرتی ہوں اور ان کے ساتھ روزانہ ویڈیو پر بات چیت کرتی رہتی ہوں۔ عالیہ ریاض نے کہا کہ اس لاک ڈاأن کی وجہ سے گھر والوں کے ساتھ ایک لمبے عرصے کے بعد وقت گزارنے کا موقع ملا ہے، گھر میں رہتے ہو ئے میں اپنا ناشتہ خود تیار کرتی ہوں، اب جب کہ رمضان شروع ہو گیا ہے تو میں افطاری میں اپنی والدہ اور بہن کی مدد کروں گی، افطاری کے لیے فروٹ چاٹ خود بناؤں گی۔ ‏آل راونڈر نے بتایا کہ روزانہ کی بنیاد پر اپنے گھر کے بیسمنٹ میں ورک آؤٹ کرتی ہوں تاکہ فٹنس برقرا ر رہے اور پھر سہہ پہر میں اپنی بہن اور بھائی کے ساتھ گھر کی چھت پر کرکٹ کھیلتی ہوں، بہن کی بولنگ پر ہٹنگ کرتی ہوں جب کہ بھائی بال لیکر آتا ہے۔ ‏ عالیہ ریاض کا کہنا ہے کہ اس مشکل وقت میں کوشش کریں کہ زیادہ سے زیادہ گھروں میں رہیں، اپنی فیملی کے ساتھ وقت گزار کر انجوائے کریں جب کہ طبی ماہرین اور حکومت کی جانب سے جو احتیاطی تدابیر اختیار کرنے کا کہا گیا ہے اس پر عمل کریں، ماسک پہنیں، ہینڈ سینی ٹائزر استعمال کریں، اور سب سے بڑھ کر سماجی فاصلے اختیار کریں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں