0

بند اسٹیڈیمز میں میچز کا فیصلہ ہوتا ہے توکھیلنا پڑے گا، امام الحق

اسلام آباد(نیو زڈیسک)ٹیسٹ کرکٹر امام الحق کا کہنا ہے کہ ہمارا کام کھیلنا ہے، بند اسٹیڈیمز میں اگر میچز کرانے کا فیصلہ ہوتا ہے توکھیلنا پڑے گا۔امام الحق نے ویڈیو کانفرنس کے دوران فٹنس ٹیسٹ سے متعلق بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ فٹنس ٹیسٹ اچھے رہے، کھلاڑیوں کواپنی ذمہ داری کا احساس رہا۔امام الحق نے کہا ہے کہ پے کٹس کرنے کا فیصلہ بورڈ کا کام ہے، بورڈ کے فیصلے کوتسلیم کریں گے، ٹی 20 ورلڈ کپ اگر ہوتا ہے توشائقین کے ساتھ ہونا چاہیے۔انہوں نے قومی ٹیم کے سابق ہیڈ کوچ اور حالیہ ہیڈ کوچ سے متعلق بات کرتے ہوئے کہا کہ مکی آرتھر کو جلدی غصہ آجاتا تھا، مصباح الحق پر سکون رہتے ہیں۔ویڈیو کانفرنس کے دوران نہوں نے مزید کہا کہ سوشل میڈیا کے تنازعات میرے بس میں نہیں ہیں۔قومی ٹیم کے بلے باز اسد شفیق کا کہنا تھا کہ لاک ڈاؤن میں فٹنس ٹیسٹ مختلف انداز میں ہوئے، کرکٹ میں جس مقام پر مجھے ہونا چاہیے تھا وہاں تک نہیں جاسکا۔اسدشفیق نے مزید کہا کہ مجھے نمبر چھ پر بیٹنگ کرنا پڑتی ہے، اس نمبر پر لمبی اننگز کھیلنا مشکل ہوتا ہے۔انہوں نے کہا کہ اگر میں دلیر بیٹسمین نہیں ہوتا تو آسٹریلیا میں جاکر سنچری نہیں بناتا ۔اسد شفیق کا مزید کہنا تھا کہ شعیب اخترنے یہ بات کی لیکن انہیں میرے ریکارڈز معلوم نہیں ہیں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں