0

نیا پاکستان بن گیا ۔۔۔ احساس پروگرام کے تحت رقم نہ دینے پر ایجنٹ کے ساتھ کیا سلوک کیا گیا ؟ جانئے

لاہور(ویب ڈیسک)گورنمنٹ ایلیمنٹری سکول پنگالی ڈیرہ برکی کے احساس کیمپ میں رقم دینے کی بجائے غلط بیانی کرنے والے ایجنٹ کو گرفتار کرلیا گیا ۔ فہیم اسلم نے اقبال بانو کو رقم کی ادائیگی کرنے سے انکار کیا ۔ ۔انگوٹھا سیکننگ کے بعد ایجنٹ نے رقم ملتان روڈ سنٹر سے ملنے کی غلط بیانی کی۔اقبال بانو 19اپریل 2020 کو ملتان روڈ سنٹر گئیں جہاںتصدیق کے بعد معلوم ہوا کہ رقم 12 اپریل 2020 کو نکلوائی جا چکی ہے۔اقبال بانو کے شکایت کرنے پر ضلعی انتظامیہ نے کاروائی کر کے اقبال بانو کی رقم اسے دلوا دی جو 21ہزار روپے بنتی تھی ۔ ایجنٹ فہیم اسلم کے خلاف ایف آئی آر کا اندراج کروا کے گرفتار کر لیاگیا ۔جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق سینئر تجزیہ کار فرخ سلیم نے کہا ہے کہ بجلی کمپنیوں نے قومی خزانے کو 5 ہزار 823ارب کا ٹیکہ لگایا، ہر بجلی صارف سے اڑھائی لاکھ اضافی وصول کیے گئے، ٹیکہ لگانے والوں میں میاں منشاء ،میاں بابر ،جہانگیرترین،خسروبختیاراور شریف فیملی کی چنیوٹ کمپنی شامل ہے۔ انہوں نے اپنے پاورسیکٹر کی انکوائری رپورٹ پر تبصرہ کرتے ہوئے بتایا کہ میں نے دسمبر2018ء میں وزیراعظم کو بجلی منصوبوں پر بڑی تفصیلی بریفنگ دی تھی ،2019ء میں وزیراعظم نے ایک کمیٹی تشکیل دے دی، جس میں آئی ایس آئی کا بھی ممبر شامل تھا،اس کمیٹی کی رپورٹ سامنے آگئی ہے۔اس انکوائری کمیٹی کی رپورٹ میں دو چیزیں بڑی واضح بتائی گئی ہیں، نمبر ایک کہ ٹیکے کی رقم کتنی ہے؟اور نمبر دو کہ ٹیکہ کس کس نے لگایا؟ ٹیکے کی رقم میں چار انفرادی ٹیکے ہیں۔جس کے تحت کرنسی کی قدر میں کمی کرکے قومی خزانے کو4 ہزار726 ارب کا ٹیکہ لگایا گیا۔ اضافی ایندھن کی مد میں209 ارب، آئی آر آر کے غلط حساب کی مد میں565 ارب اور مزید سیٹ اپ کی مد میں323ارب کا ٹیکہ لگایا گیا۔کل ٹیکہ 5ہزار 823 ارب کا لگایا گیا۔دو ٹیکے اور ہیں، ان میں 2007 سے 2019ء تک بجٹ میں3200 کی سپورٹ دی گئی۔گردشی قرضوں کی مد میں 2 ہزار کا ٹیکہ لگایا گیا۔ فرخ سلیم نے بتایا کہ یہ ٹیکہ کس کس نے لگایا، اس رپورٹ میں میاں منشاء کا نشاط کمپنی کے حوالے سے 23 بار ذکر کیا گیا ہے۔جس نے 9ارب کا منافع کمایا۔ میاں بابر کی اورینٹ کمپنی ہے، اس کا 22بار ذکر کیا گیا ہے، منافع ایک ارب کمایا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں