رمضان المبارک کے دوران سرکاری ملازمین کی موجیں۔!! حکومت نے سرکلر جاری کر دیا

دبئی (ویب ڈیسک) متحدہ عرب امارات اور دیگر خلیجی ریاستوں میں 23 اپریل کی رات کو ماہِ رمضان کا چاند نظر آنے کا بھرپور امکان ظاہر کیا جا رہا ہے۔ اس صورت میں امارات میں پہلا روزہ 24 اپریل بروز جمعة المبارک کو ہوگا۔ اس بار کورونا وائرس کی وبا کے باعث لوگ مساجد میںاجتماعی نمازیں ادا نہیں کر پائیں گے، کیونکہ ممتاز علماء کے فتوؤں اور حکومتی احکامات کے باعث مساجد میں نماز اور تراویح کی ادائیگی پر پابندی ہو گی۔ متحدہ عرب امارات کے وفاقی ادارہ برائے سرکاری افرادی قوت کی جانب سے اعلان کیا گیا ہے کہ رمضان المبارک کے دوران تمام سرکاری دفاتر و محکموں میں پانچ گھنٹے کام ہو گا۔ اتوار کے روز جاری کردہ سرکلر میں کہا گیا ہے کہ تمام وزارتوں اور وفاقی محکموں میں اوقات کار صبح 9 بجے سے لے کر دوپہر 2 بجے تک ہوں گے۔ حکومت کی جانب سے ابھی نجی شعبے کے لیے اوقاتِ کار کا اعلان نہیں کیا گیا، جو آج یا کل تک کر دیا جائے گا۔ واضح رہے کہ مملکت میں بیشتر سرکاری ملازمین کو کورونا وائرس کی وبا کے باعث گھروں سے کام کرنے کی اجازت دی گئی ہے، جبکہ کچھ وفاقی ملازمین کو تنخواہ کے ساتھ رخصت پر بھیج دیا گیا ہے تاکہ اس موذی وائرس کے پھیلاؤ کا خدشہ کم سے کم ہو سکے۔ گزشتہ روز متحدہ عرب امارات میں کورونا کے 479 نئے کیسز سامنے آگئے،جس کے بعد مملکت میں کورونا سے متاثرہ افراد کی تعداد 6ہزار 781تک پہنچ گئی ہے جبکہ مزید 4افراد کے جاں بحق ہونے سے اموات کی تعداد 41 ہوگئی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں