0

کاروباری خواتین کو خصوصی ریلیف پیکیج دیا جائے: وفاقی چیمبر

اسلام آباد(نیو زڈیسک)فیڈریشن آف پاکستان چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹری (ایف پی سی سی آئی) کی نائب صدر روحی رضوان نے وفاقی حکومت سے مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ ملک بھر میں قائم ویمن چیمبرز کی کاروباری خواتین کو خصوصی ریلیف پیکیج دیا جائے تاکہ وہ اپنا کاروباری سرگرمیاں جاری رکھ سکیں۔انہوں نے مزید کہا کہ خواتین ملکی آبادی کا نصف ہیں جن کے بغیر ملکی معیشت میں بہتری ممکن نہیں ہے۔ مرکزی بینک ان کے قرضے ری شیڈول کرے اورسود ختم کیا جائے، انھیں بلا سود قرضے دئیے جائیں اور ان کی استعداد بڑھانے کے لئے دیگر تمام اقدامات ترجیحی بنیادوں پر کئے جائیں۔روحی رضوان نے کہا کہ ریلیف پیکیج کے تحت تمام ویمن چیمبرز کے آفسز کا تین سے چار ماہ کا کرایہ اور یوٹیلیٹی بلز حکومت ادا کرے جبکہ تمام ویمن چیمبرز کی سالانہ رکنیت کی تجدید کی تاریخ میں ایک ماہ کا مزید اضافہ کیا جائے۔ان کا مزید کہنا تھا کہ ملکی معیشت میں سمال اینڈ میڈیم انٹرپرائزز(ایس ایم ایز) کے شعبہ کا اہم کردار ہے۔اور خواتین کی بڑی تعداد اسی شعبہ سے وابستہ ہے ،حکومت اس شعبہ پر خصوصی توجہ دے اور آسان شرائط پر قرضے دے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں