ہری مونگ کی دال کے طبی فوائد

اسلام آباد(نیوز ڈیسک)ہری مونگ کی دال پروٹین سے بھرپور ہونے کے ساتھ بے شمار فوائد کی حامل ہے اور اسے کئی طریقوں سے استعمال کیا جا سکتا ہے۔ماہرین غذائیت کے مطابق غذا کا زیادہ تر حصہ پروٹین پر مشتمل ہونا چاہیئے اور اگر آپ وزن کم کرنے کے خواہش مند ہیں تو آپ کو ایسی غذائیں استعمال کرنی چاہیئں جو پروٹین اور فائبر سے بھر پور ہوں، اس دال کے استعمال سے گھنٹوں بھوک نہیں لگتی جس کے سبب آپ کوئی بھی اور دوسری غذا لینے سے باز رہتے ہیں اور آپ کا وزن کنٹرول میں رہتا ہے ۔پروٹین گوشت میں بھی پایا جاتا ہے ، اگر روزانہ گوشت کھانا نہیں پسند کرتے تو مونگ دال بے شمار فوائد کے ساتھ بہترین آپشن بھی ہے، دالیں پلانٹ پروٹین بیسڈ ہوتی ہیں ، ان میں فائبر اور پروٹین دونوں بھار ی مقدار میں پایا جاتا ہے ۔مونگ دال کو کئی طریقوں سے استعمال کیا جا سکتا ہے ، اسے آپ دن میں دو بار دو الگ طریقوں سے کھا سکتے ہیں ، مونگ دال کا سالن یا اس کی کھچری ہری چٹنی کے ساتھ استعمال کریں ، ہلکی پھلکی بھوک مٹانے کے لیے آپ اسے فرائی کر کے بھی کھا سکتے ہیں ، اس سے آپ کو پروٹین اور فائبر سمیت دیگر وٹامنز اور منرلز بھی مل جائیں گے ۔جن افراد کا کولیسٹرول لیول بڑ ھا ہوا ہو ان کے لیے یہ ایک بھر پور غذا کے ساتھ علاج بھی ہے، بڑی عمر کے افراد میں دل کا عارضہ بڑھ جاتا ہے ، ایسے میں اس دال کے استعمال سے پروٹین، فائبر ملنے سے کولیسٹرول لیول کم ہو جاتا ہے اور اسے ہضم کرنا بھی آسان ہے ۔مونگ دال میں پوٹاشیم پایا جاتا ہے جس کے نتیجے میں یہ دال بلڈ پریشر کنٹرول کرنے کی قدرتی صلاحیت رکھتی ہے، اس میں فائبر کی مقدار ہونے کے سبب قبض میں بھی مفید ہے ۔مونگ دال میں قدرتی طور پر اینٹی آکسیڈنٹ اجزا پائے جاتے ہیں جس کے سبب یہ جسم میں جمع فاضل مادوں کو باہر نکال دیتی ہیں، خون کی صفائی ہوتی ہے اور صحت برقرار رہتی ہے ، مونگ دال کے استعمال سے انسانی جسم میں وافر چربی نہیں جمتی جس سے خون کی گردش بغیر کسی رکاوٹ کے رواں رہتی ہے اور دل صحت مند رہتا ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں