ہم معیشت کودوبارہ زندہ کرسکتے ہیں لیکن لوگوں کونہیں کرسکتے،بلاول بھٹو

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری کا کہنا ہے کہ ہم معیشت کودوبارہ زندہ کرسکتے ہیں لیکن لوگوں کونہیں کرسکتے۔تفصیلات کے مطابق پیپلزپارٹی کے سربراہ بلاول بھٹو نے عالمی خبر رساں ادارے کو انٹرویو میں کہا کہ اب تک پاکستان میں کرونا سے 94 افراد فوت ہوچکے ہیں، پاکستان میں 5230 افراد میں کورونا کی تصدیق ہوچکی ہے۔چیئرمین پیپلزپارٹی کا کہنا تھا کہ وبا کی تیزی کا احساس نہ ہونے سے بروقت ضروری اقدامات میں مشکلات ہیں،ماہرین صحت نےتجویز دی تھی ملک میں سخت اقدامات کیےجائیں۔بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ ہم معیشت کو دوبارہ زندہ کرسکتے ہیں لیکن لوگوں کو نہیں کرسکتے،ہم صرف یہ امید نہیں کرسکتے کہ سب خود اچھا ہوجائےگا،اگر ہم اپنی تیاری نہ کریں تو پاکستان خاموشی سے تباہی کی طرف جاسکتا ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان میں حفاظتی لباس،طبی عملے اور آلات کی بھی کمی ہے،پاکستان میں صورتحال امریکا،مغربی یورپ سے بھی بری ہو سکتی ہے۔یاد رہے کہ دو روز قبل بلاول بھٹو زرداری کا کہنا تھا کہ حکومت کی سب سے بڑی ترجیح لوگوں کی زندگی محفوظ بنانا ہونا چاہیے،کرونا وبا کا سامنا کرنے کے لیے سب کو متحد ہونا ہوگا۔چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری کا کہنا تھا کہ سندھ حکومت کےاقدامات سے شہریوں کا ریاست پراعتماد مضبوط ہوا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں