0

مشکل وقت ٹل گیا۔۔!! گورنر سٹیٹ بینک نے مہنگائی میں کمی کی نوید سنا دی، کاروباری اداروں کیلئے بڑی خوشخبری

کراچی(ویب ڈیسک ) گورنرسٹیٹ بینک ڈاکٹر رضا باقر نے کہا ہے کہ آنے والےدنوں میں ملک میں مہنگائی میں کمی کے امکانات ہیں جبکہ اتنے مالی وسائل ہیں کہ آگے کی ضروریات پوری کرلیں گے،جو کاروباری ادارے اپنے ملازمین کی اگلے تین کی تنخواہیں برقرار رکھیں گے تو انہیں اس کے لیے 5 فیصدشرح سود پر قرض دیا جائے گا،ریفارمز کی وجہ سے پاکستان کی معیشت مستحکم ہوگئی تھی، اگر یہ وباء پہلے آئی ہوتی تو معیشت کا زیادہ برا حال ہوتا،ایک ہفتے کے اندر 70 ہزار کمپنیز نے بینکس سے 5 ارب کے قرضوں میں ایک سال کی توسیع کروائی ہےسٹیٹ بینک کے ذخائر میں کمی آئی ہے مگر آئی ایم ایف اور دوسرے اداروں سے ملنے والی رقم سے آنے والے دنوں میں ذخائر مستحکم رہیں گے۔ نجی ٹی وی چینل ‘جیو نیوز’ کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے گورنرسٹیٹ بینک ڈاکٹر رضا باقر نے کہا کہ ہمارے زرمبادلہ کے ذخائر ضرور کم ہوئے ہیں لیکن اگر یہ وبا ایک سال قبل آئی ہوتی تو اس وقت ذخائر اس سے بھی کم تھے، وبا سے قبل ہماری معیشت کی بنیادیں مضبوط ہورہی تھیں، ذخائر اور کرنسی ریٹ دیگر ممالک کے بھی کم ہوئے ہیں اس لیے ہمیں اسے عالمی پس منظر میں دیکھنا چاہیے۔انہوں نے کہا کہ ہم چاہتے ہیں کہ سستے ریٹ پر قرضہ لیں، ایشیائی ترقیاتی بینک (اے ڈی بی) سے بھی سستے ریٹ پر قرضہ لے رہے ہیں، اتنے وسائل ہیں کہ آگے کی ضروریات پوری کرلیں گے جبکہ آگے آنے والی ری پیمنٹس کا انتظام بھی ہو جائے گا۔انہوں نے کہا کہ کورونا کے باعث ملک میں حالات تیزی سے تبدیل ہورہے تھے جس کے باعث زرعی پالیسی کمیٹی نے ایک ہفتے میں دو اجلاس کیے، وبا کی وجہ سے عالمی صورتحال میں ہونے والی تیزی سے تبدیلی کے بعد پاکستان میں 225 بیسز پوائنٹس میں کمی دنیا کی دوسری سب سے بڑی کمی ہے۔انہوں نے کہا کہ اگر انٹرنیشنل انویسٹرز پاکستان میں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں