0

جزائر سلیمان کے ساتھ سفارتی تعلقات قائم کرنے کے فیصلے پر چینی وزارت خارجہ کا ردعمل

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک )چینی وزارت خارجہ کی ترجمان ہوا چھون اینگ نے سولہ ستمبر کو جزائر سلیمان کی طرف سے تائیوان سے نام نہاد “سفارتی تعلقات ” توڑ کرچین کے ساتھ سفارتی تعلقات قائم کرنے کے فیصلے کے حوالے سے نامہ نگاروں کے سوالات کا جواب دیا۔

نامہ نگاروں نےسوال کیا کہ سولہ ستمبر کو جزائر سلیمان کی حکومت نے کابینہ کے اجلاس میں ایک چین کے اصول کو قبول کرتے ہوئے تائیوان سے نام نہاد”سفارتی تعلقات “توڑنے اور چین کے ساتھ سفارتی تعلقات قائم کرنے کا فیصلہ کیا۔ اس حوالے سے چین کا کیا ردعمل ہے؟

ہوا چھون اینگ نے کہا کہ چین جزائر سلیمان کے اس فیصلے کو سراہتا ہے۔ ہوا چھون اینگ نے کہا کہ دنیا میں صرف ایک چین ہے۔ عوامی جمہوریہ چین کی حکومت سارے چین کی واحد نمائندہ اور قانونی حکومت ہے۔ تائیوان چین کا ایک ناقابل تقسیم حصہ ہے اور یہ ایک حقیقت ہے۔ اس بات پرعالمی برادری کا اتفاق رائے ہے۔ ایک چین کے اصول کی بنیاد پرعوامی جمہوریہ چین نے دنیا کے ایک سو اٹہتر ممالک کے ساتھ سفارتی تعلقات قائم کئے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں