حکومت کا جمعہ کے روز پورے صوبے میں مکمل لاک ڈاؤن کا فیصلہ ،کتنی دیر کے لئےٹریفک اور کاروباری سرگرمیوں پر پابندی ہو گی؟نوٹیفکیشن جاری

کراچی(ویب ڈیسک) سندھ حکومت نے جمعہ کے روز صوبے بھر میں دوپہر 12بجے سے لیکر 3 بجے تک مکمل لاک ڈاؤن کا فیصلہ کیا ہے۔نجی ٹی وی کےمطابق سندھ حکومت نےجمعہ3اپریل کوصوبے بھر میں دو پہر 12 بجے سے لیکر 3بجے تک مکمل لاک ڈاؤن کا فیصلہ کیا ہےجبکہ فیصلے پر عمل کروانے کے لیےپولیس حکام کو خصوصی ہدایت بھی کردی گئی ہیں ۔ فیصلہ نماز جمعہ کے اجتماعات محدود کرنے کے لیے کیا گیا ہے جب کہ سندھ حکومت نے مختلف مکاتب فکر کے علمائےکرام سے مشاورت بھی کرلی ہے۔ذرائع سندھ حکومت کے مطابق جمعہ کو لاک ڈاؤن کے دوران کسی قسم کی دکانیں کھولنے کی اجازت نہیں ہوگی جب کہ ہر قسم کی ٹریفک اور کاروباری سرگرمیوں پر بھی پابندی ہوگی، سندھ حکومت کے احکامات پر محکمہ داخلہ باضابطہ اعلامیہ جاری کرے گا۔دوسری طرف ترجمان سندھ حکومت نے کہا ہےکہ نماز جمعہ کے اجتماعات کو محدود کرنے کے فیصلے سے علماء متفق ہیں۔جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق وفاقی حکومت کی جانب سے کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کیلئے کیے گئے لاک ڈاؤن کی مدت 14 اپریل تک بڑھادی گئی ہے۔وزیر اعظم عمران خان کی زیر صدارت قومی رابطہ کمیٹی اجلاس کے بعد نیوز بریفنگ دیتے ہوئے وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی اسد قیصر نے بتایا کہ وفاقی حکومت نے 2 ہفتوں تک لاک ڈاؤن جاری رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔وفاق اور تمام صوبوں نے مشاورت سے فیصلہ کیا ہے کہ بندشوں کو یکم سے 14 اپریل تک موجودہ صورتحال برقرار رکھی جائے گی۔وزیر منصوبہ بندی نے بتایا کہ 14 اپریل سے پہلے قومی رابطہ کمیٹی کا ایک اور اجلاس ہوگا جس میں پابندیوں کو ختم کرنے یا بڑھانے کے حوالے سے مشاورت کی جائے گی۔کورونا وائرس ،جاپان نے پاکستان کو اتنے کروڑ ڈالر امداد فراہم کر دی کہ پاکستانیوں کے چہرے خوشی سے کھل اٹھیں گےانہوں نے کہا کہ ماضی میں بیرون ملک سے آنے والوں کی وجہ سے پاکستان میں کورونا وائرس پھیلا ہے، اب 4 اپریل کو بیرون ملک سے ایک پرواز آئے گی، تمام مسافروں کو ایئر پورٹ پر ہی قرنطینہ میں رکھ کر ٹیسٹ کیے جائیں گے اور رزلٹ منفی آنے پر انہیں جانے کی اجازت دی جائے گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں