0

مسٹر عمران ! اگرگرے لسٹ سے نکلنا ہے تو سی پیک سے پیچھے ہٹ جاؤ کیونکہ۔۔۔ امریکہ نے پاکستان کے سامنے شرط رکھتے ہوئے حیران کن آفر پیش کر دی

اسلام آباد(ویب ڈیسک) سینئر صحافی ہارون الرشید کا کہنا ہے کہ پاکستان بھارت کی وجہ سے نہیں بلکہ امریکہ کی وجہ سے تاحال گرے لسٹ میں ہے۔ بھارت تو اپنے منصوبوں میں ناکام ہو چکا ہے۔ بھارت چاہتا تھا کہ پاکستان کو تباہ کن ملک کے طور پر پیش کیا جائے ۔ وہ چاہتے تھےکہ حافظ سعید کو ہمارے حوالے کیا جائے لیکن بھارت کا کوئی مطالبہ نہیں مانا گیا۔بھارتی اخبار نے رپورٹ شائع کی ہے کہ چین نے پاکستان کی حمایت نہیں کی ۔جس کے بعد چین نے بیان جاری کیا کہ ہم پاکستان کے ساتھ ہیں ہم اس کی مدد کریں گے،دوسرے دوست ملک بھی پاکستان کی مدد کریں گے۔39 ممالک میں سے 10 ملک بھارت کے ساتھ ہیں،لیکن وہ ممالک امریکا کے ساتھ بھی ہیں۔امریکا آج بھی مختلف ملکوں کو گرانٹ دیتا ہے۔امریکا چاہتا ہے کہ پاکستان سی پیک سے الگ ہو جائے اور متبادل امریکی منصوبہ قبول کر لے۔اب تو سڑکیں بن چکی ہیں،بجلی کے کارخانے بن چکے ہیں۔اب پاکستان سی پیک سے نہیں نکل سکتا، کوئی درمیانی راستہ نکلے گا۔ہارون الرشید نے مزید کہا کہ امریکا ایک تو سی پیک کے حوالے سے ناراض ہے دوسرا وہ افغانستان پر دباؤ رکھنا چاہتا ہے۔اگر پاکستان امریکا کی شرائط مان لے تو اس کا مطلب ہے کہ پاکستان بھارت کا دباؤ قبول کر لے اور اپنے نظریے سے ہٹ جائے جو ممکن نہیں ہے۔دوسری جانب ایک خبر کے مطابق امریکی صدر دورہ بھارت کے دوران پاکستان سے کشیدگی کم کرنے پر زور دیں گے ۔وائٹ ہاؤس ، نجی ٹی وی کے مطابق مطابق وائٹ ہاؤس نے بھارت میں متنازع شہریت قانون سے پیداہونے والی صورتحال پر اظہار تشویش کیا ہے ،وائٹ ہاؤس نے کہا کہ امریکی صدر مذہبی آزادی کے معاملے پر بھارتی وزیراعظم مودی سے بات کریں گے ،امریکا کو متنازع شہریت قانون پر تشویش ہے۔ مذہبی آزادی صدرٹرمپ کیلئے اہم ہے ،بھارت میں اقلیتوں کے حقوق سے متعلق معاملہ حساس ہے اسے حل ہونا چاہئے ، امریکی صدرڈونلڈ ٹرمپ معاملات مذاکرات سے حل کرنے کے حامی ہیں ۔وائٹ ہاؤس کاکہنا ہے کہ پاکستان اور بھارت میں ایل او سی پر استحکام کی فضا پیدا کرنے کی بات ہوگی،امریکا کی توجہ افغانستان میں امن عمل پر ہے ،خطے میں دیگر ممالک سے افغان امن عمل میں معاونت کے خواہاں ہیں ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں