0

مسلم لیگ (م) گروپ ان ایکشن: کسی کو خبر بھی نہ ہوئی اور حمزہ شہباز کو اپنی ہی جماعت نے زبردست جھٹکا دے دیا

لاہور(ویب ڈیسک ) حکومت پہلے حمزہ کو چیئرمین بنائے ، پھر پارٹی کسی اورکا سوچ سکتی ہے پنجاب اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر میاں حمزہ شہباز کو پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کا چیئرمین بنانے کے معاملہ میں ن لیگ نے چیئرمین پی اے سی ون کے معاملے پر لچک کا عندیہ دے دیا۔ ذرائع کے مطابق حکومت کی طرف سے کچھ عرصہ قبل ن لیگ کو پیغام دیا گیا تھا کہ وہ اگر حمزہ شہباز کے بجائے پارٹی کے کسی اور ممبر کا نام دیں تو انہیں پی اے سی کا چیئرمین بنا دیا جائے گا۔ مسلم لیگ ن کے ذرائع کا کہنا ہے کہ پہلے میاں حمزہ شہباز کو پی اے سی ون کا چیئر مین بنایا جائے پھر قومی اسمبلی کی طرح پنجاب میں بھی پی اے سی کے متبادل چیئر مین کے نام پر غور ہوسکتا ہے ۔اس سلسلہ میں مسلم لیگ ن کے رکن پنجاب اسمبلی سمیع اللہ خان نے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ حکومت پہلے اپوزیشن لیڈر حمزہ شہباز کو چیئرمین پی اے سی بنائے ،پھرپارٹی فیصلہ کرے گی کہ حمزہ شہباز 5 سال رہیں گے یا پارٹی کسی اور کو یہ ذمہ داری سونپے گی، تاہم یہ خالصتاً فیصلہ ن لیگ کرے گی،کسی اور کی خواہش پر نہیں۔انہوں نے کہا کہ ہم نے اپنے دور میں میاں محمودالرشید کو 5 سال تک پی اے سی کا چیئر مین بنائے رکھا۔یہ پنجاب اسمبلی کی روایت ہے کہ اپوزیشن لیڈر ہی پی اے سی کا چیئرمین ہوتا ہے ۔ یاد رہے کہ چوہدری شوگر مل کیس میں مریم نواز کی درخواست ضمانت کو عدالت کی جانب سے بار بار مسترد کر دیا گیا ہے جس کے بعد گزشتہ روز کیس کی سماعت کرتے ہوئے ایک مرتبہ پھر ان کے ضمانت کی درخواست مسترد کر دی گئی ہے۔اس موقع پر ان کے وکیل کا کہنا تھا کہ ہم ہر قسم کی گارنٹی دینے کو تیار ہیں کہ مریم بی بی 4 سے 6 ہفتوں میں واپس آجائے گی۔انہیں اپنے والد کی تیمارداری کے لئے جانے کی اجاز ت دی جائے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں