زوالجناح کی تاریخ

ذوالجناح جس پر سوار ہوکر امام حسین علیہ اسلام نے کربلا میں حق و باطل کا معرکہ سر کیا تھا، ذاکرین کا کہنا ہے کہ ذوالجناح کو شہداء کربلا کی یاد میں منعقدہ مجالس اور جلوسوں کا سینگھار بھی کہا جاتا ہے ۔

علماء اکرام کے مطابق یہ گھوڑا جس کا نام ’مرتجس‘ تھا سرکار دوعالم صلی اللہ تعالیٰ علیہ آلہ وسلم کو جنگ میں مال غنیمت کے طور پر ملا تھا، جسے آپ صلی اللہ تعالیٰ علیہ وآلہ وسلم نے اپنے نواسے حضرت امام حسین علیہ سلام کو تحفے میں دیا تھا اور آپ نے ہی اسکا نام ذوالجناح یعنی دو پروں والا رکھا تھا ۔

زوالجناح نے کربلا کے میدان میں وفاداری کی اعلیٰ مثال قائم کرتے ہوئے امام ِ عالی مقام کے ساتھ ہی شہادت کا رتبہ حاصل کیا تھا۔

یہی وجہ ہے کہ محبان محمدﷺ اور آل محمد شبیہہ ذوالجناح برآمد کرتے ہیں اور ایام عزا میں اسکا تذکرہ بڑے ہی احترام کے ساتھ کرتے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں