0

یااللہ خیر : چین میں کرونا وائرس کی تباہ کاریاں جاری ۔۔۔ مگر کراچی والوں پر کیا آفت آن پڑی ۔۔۔ پراسرار واقعہ میں بڑا جانی نقصان ہو گیا

کراچی(ویب ڈیسک) کراچی کے علاقے کیماڑی میں پر اسرار زہریلی گیس پھیلنے کے سبب 6 افراد ہلاک اور 100 سے زائد متاثر ہو چکے ہیں جنہیں شہر کے مختلف ہسپتالوں میں ابتدائی طبی امداد دی جا رہی ہے. گورنر سندھ عمران اسماعیل، میئر کراچی وسیم اختر اور دیگر صوبائی قیادت نے واقعہ پر افسوس کا اظہاراور لواحقین کے ساتھ ہمدردی کا اظہار کیا ہے پر اسرار گیس سے ہلاک ہونے والوں میں 2 خواتین، 1 بچہ اور 3 مرد شامل ہیں ہلاک شدگان کی شناخت معمار بی بی، یاسمین، رضوان، عظیم اختر، احسن اور رابش کے نام سے ہوئی ہے. صوبائی وزیر تعلیم سعید غنی کے مطابق تا دم تحریر زہریلی گیس پھیلنے کی وجوہات کا علم نہیں ہوسکا اور جب تک وجوہات سامنے نہیں آتیں پریشانی رہے گی انہوں نے بتایا کہ زہریلی گیس سے سانس کی بیماری کے مریض زیادہ متاثرہوئے ہیں. میئر کراچی وسیم اختر نے کہا ہے کہ زہریلی گیس کے سبب متعدد افراد کی ہلاکت اور درجنوں کا بے ہوش ہونا تکلیف دہ صورت حال ہے اور ابھی تک درست وجوہات حاصل نہ ہونا تشویشناک بات ہے انہوں نے مطالبہ کیا کہ وجوہات معلوم کرکے ذمہ داری کا تعین ہونا چاہئے. نیوی کی ٹیم نے زیر علاج مریضوں کا معائنہ کیا اور خون کے نمونے لیے ہیں جب کہ متاثرین کے رہائشی علاقے سے پانی کے نمونے بھی حاصل کیے ہیں.سو سے زائد متاثرہ افراد طبی امداد دینے کے بعد روانہ کردیا گیا جبکہ متعدد افراد اب بھی ضیا الدین ہسپتال میں زیر علاج ہیں جہاں طبی سہولیات فراہم کی جا رہی ہیںذرائع کے مطابق جناح، سول اور کتیانہ میمن ہسپتال سے تمام افراد کو طبی امداد کی بعد گھر واپس بھیج دیا گیا ہے.ضیاالدین میں سو سے زائد، کتیانہ میں 22، جناح میں 8 اور سول ہسپتال میں 2 متاثرین کو لایا کیا گیا تھا جب کہ ضیا الدین ہسپتال میں وقفے وقفے سے مریضوں کی آمد کا سلسلہ اب بھی جاری ہے.پاکستان نیوی کی بیالوجی اینڈ کیمیکل ڈیمج کنٹرول ٹیم میں رات گئے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں