0

پاکستان کی معروف ٹرانسپورٹ کمپنی کے مالک کو دن دیہاڑے قتل کر دیا گیا وجہ کیا بنی ؟ جانئے

کراچی (نیوزڈیسک) بلدیہ اتحاد ٹائون میں مسلح ملزمان نےفائرنگ کر کے ٹرانسپورٹر اور اے این پی کے رہنماکو گولیا ں مار کر قتل کردیا۔تفصیلات کے مطابق بلدیہ نیول موڑ سعید آباد کے قریب دو موٹر سائیکلوں پر سوار تین ملزمان نےکار پرسوار ٹرانسپورٹر حاجی ظفر اللہ آفریدی کو ڈکیتی مزاحمت کرنے پرفائرنگ کر دی جسکے نتیجے میں وہ زخمی گئے،انھیں سول اسپتال منتقل کیا جا رہا تھا کہ راستے میں ہی انہوں نے دم توڑ دیا ،کار میں انکا بیٹا اور اڈے کا منشی بھی ساتھ تھات اہم خوش قسمتی سے دونوں محفوظ رہے ،ملزمان مقتول کی رقم،موبائل فونز اور نائن ایم ایم پستول بھی چھین کر لے گئے ۔ مقتول حاجی ظفر اللہ الیاس کوچ اور روٹ نمبر ایکس 10اڈے کے مالک تھے اور واقعہ کے وقت مبینہ طور پر اڈے سے رقم لیکر آ رہے تھے ۔مقتول حاجی ظفر اللہ عوامی نیشنل پارٹی ضلع ویسٹ کے صدر سیف اللہ آفریدی اور کراچی ٹرانسپورٹ اتحاد کے جنرل سیکریٹری سید محمود آفریدی کےبھائی تھے ۔مقتول کی لاش کو سول اسپتال منتقل کیا گیا،اطلاع ملنے پر انکے اہلخانہ اور رشتہ داروں سمیت ٹرانسپورٹ برادری کی بڑی تعداد سول اسپتال پہنچ گئی جس میں کراچی ٹرانسپورٹ اتحاد کے صدر ارشاد بخاری سمیت دیگر رہنما شامل تھے ۔دوسری جانب ایک خبر کے مطابق محراب پور میں سینئر صحافی عزیز میمن کے قتل کے خلاف صحافی سراپا احتجاج بن گئے ہیں، ایسوسی ایشن آف الیکٹرانک میڈیا ایڈیٹرز اینڈ نیوز ڈائریکٹرز نے صحافی کے قتل پر اظہار مذمت کیا۔ اے آر وائی نیوز کے مطابق صحافی عزیز میمن کے قتل پر صحافی سراپا احتجاج بن گئے ہیں، قتل کے خلاف خیرپور پریس کلب سمیت تمام تحصیلی یونٹس میں مظاہرے کیے جائیں گے، ضلعے کے تمام پریس کلبز پر سیاہ جھنڈے بھی لگائے جائیں گے۔ ایسوسی ایشن آف الیکٹرانک میڈیا ایڈیٹرز اینڈ نیوز ڈائریکٹرز (ایمنڈ) نے کہا ہے کہ سر عام قتل کے واقعے پر میڈیا کمیونٹی صدمے سے دوچار ہے، فرض کی ادائیگی کے دوران میڈیا نمایندوں کے قتل کا تسلسل تشویش ناک امر ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں