0

خان صاحب اس کام سے جتنا ہو سکتا ہے دور رہو ورنہ ۔۔۔ آئی ایم ایف نےوزیراعظم عمران کو کس کام سے روک دیا ؟ تہلکہ خیز خبر آگئی

اسلام آباد (ویب ڈیسک) آئی ایم ایف نے چین کے حوالے سے پاکستان کو دھمکیاں دیں، بین الاقوامی مالیاتی ادارے نے پاکستان کو یہ دھمکی دی ہے کہ وہ چین کو اسکی جون کی قسط ادا نہ کرے، اگر چین کو رقم ادا کی گئی تو پاکستان اور آئی ایم ایف کے مابین پروگرام ختم ہوجائیگا۔ تفصیلات کے مطابق ایک ویڈیو میں سینئر صحافی سمیع ابراہیم نے انکشاف کیا ہے کہ آئی ایم ایف نے پاکستان کو کہا کہ آپکو بجلی اور گیس پر دوسو ارب روپے کے ٹیکس لگانا ہوں گے۔سمیع ابراہیم نے بتایا کہ پاکستان نے چین سے قرضہ لیا تھا اور سات سو ملین کی ایک قسط پاکستان نے چین کو گزشتہ ماہ ادا کی تھی۔ انھوں نے کہا کہ اس بات پر آئی ایم ایف نے اعتراض کیا کہ پاکستان نے آئی ایم ایف سے لیے ہوئے قرضے سے چین کو قسط دی لیکن پاکستان نے یہ موقف اپنایا کہ جو رقم قسط کے طور پر دی گئی تھی وہ آئی ایم ایف سے نہیں لی گئی تھی۔صحافی نے بتایا کہ پاکستان نے جون میں چین کو قسط کی مد میں کچھ رقم ادا کرنی ہے، اس پر بین الاقوامی مالیاتی ادارے نے یہ دھمکی دی ہے کہ اگر پاکستان نے چین کو وہ قسط ادا کردی تو اسے ادارے کی جانب سے 45 کروڑ ڈالر کی قسط جو کہ پاکستان نے آئی ایم ایف سے 6 ارب ڈالر کا قرضہ لیا اسکی مد میں نہیں ملے گی اور مذکورہ ریویو بھی پاکستان کے حق میں نہیں آئیگا۔انھوں نے دھمکی دی کہ پاکستان چین کی قسط کو آگے کردے ورنہ یہ پروگرام ادھرہی ختم ہوجائیگا۔اس پر عمران خان نے اپنی اقتصادی ٹیم سے کہا کہ ہم آئی ایم ایف جائے بھاڑ میں، چین کو اسکی قسط ادا کرینگے اور مالیاتی ادارے کی وجہ سے چین سے اپنی دوستی خراب نہیں کرینگے۔ سمیع ابراہیم کا کہنا تھا اس خبر کو کچھ اخباروں نے آدھا شائع کیا جس پرچین کی حکومت نے پاکستان سے بات کی کہ وہ چین کی قسط کو ریویو کرنے جا رہا ہے۔ چین نے پاکستان کے سفارتخانے سے تفصیل بھی طلب کی۔ انھوں امکان ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ ہو سکتا ہے کہ پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان مذکورہ پروگرام ختم بھی ہوجائے لیکن اسکے آثار بہت کم ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں