0

وزیراعظم ہائوس کی گاڑیوں کی نیلامی سے قومی خزانے میں کل کتنی رقم آئی ؟ اعداد و شمار سامنے آگئے

اسلام آباد (ویب ڈیسک) قومی اسمبلی میں وقفہ سوالات کے دوران حکومت نے بتایا کہ وزیراعظم ہائوس کی گاڑیوں کی نیلامی سے پچھلے 5 سالوں کے دوران 21کروڑ 75لاکھ وصول ہوئے جبکہ اسی دوران 5 کروڑ53 لاکھ کی گاڑیاں خریدی گئیں ۔ وزیر انچارج برائے وزیر اعظم ہائوس نے تحریری جواب میں بتایا کہ 2015 سے2019تک 5کروڑ 53لاکھ 43ہزار892 روپے سے 23گاڑیاں اور موٹرسائیکل خریدے گئے ، تجارت کی پارلیمانی سیکرٹری عالیہ حمزہ ملک نے بتایا کہ ملائشیا کے ساتھ آزادانہ تجارتی معاہدہ پر نظر ثانی کریں گے ۔ آٹو انڈسٹری میں 70 نئی کمپنیاں آئیں گی ،بھارت کے ساتھ میڈیسن کے سوا تمام اشیا کی تجارت معطل ہے ۔ جی ایس پی پلس سے پاکستان کی یورپی یونین سے تجارت 2013 میں 11ارب 96 کروڑ ڈالر سے بڑھ کر 2018-19 میں 14 ارب 15 کروڑ ڈالر تک پہنچ گئی ہے ۔ پاکستان 80 ممالک کو گلابی نمک کا پتھر فروخت کرتا ہے ، گلابی نمک کی برآمد سے کوئی نقصان نہیں ہو رہا۔ ایوان کو بتایا گیا کہ چینی پر موجودہ مالی سال کے دوران سیلز ٹیکس کی شرح 8سے بڑھا کر 17 فیصد کردی گئی ہے ،چینی پر ٹیکس کے اثرات تین روپے فی کلو اضافے کی صورت میں پڑے ۔ خوردنی تیل و گھی پر 16فیصد درآمدی فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی ختم کردی گئی ہے ،مشیر خزانہ نے کہا کہ چینی کے تیار کنندگان 60روپے کلو کے لحاظ سے ٹیکس ادا کر رہے ہیں، مشیر خزانہ نے بتایا کہ اس وقت ملک کا کرنٹ اکائونٹ خسارہ دو ارب 20 کروڑ ڈالر ہے ،گزشتہ مالی سال کا کرنٹ اکائونٹ خسارہ 8 ارب 60 کروڑ ڈالر تھا۔ پارلیمانی سیکرٹری عالیہ حمزہ نے بتایا کہ بھارت سے تجارت پر پابندی سے ہمیں کوئی نقصان نہیں ہو رہا، وزارت تجارت کا بھارت سے نمک برآمد کرنے کا کوئی معاہدہ نہیں ہے ۔ اس وقت کسٹم ڈیپارٹمنٹ کی تحویل میں کل 868 نان کسٹم پیڈ گاڑیاں ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں