0

بالآخر بات وہی نکلی۔۔۔۔مولانا فضل الرحمان کا راز، چوہدری پرویز الٰہی نے انتہائی خاص بات کر دی

لاہور(ویب ڈیسک) سپیکر پنجاب اسمبلی چوہدری پرویز الٰہی نے مولانا فضل الرحمان کا راز فاش کرنے سے انکار کرتے ہوئے کہا ہے کہ دھرنا ختم کرنے کے معاہدے کی بات امانت ہے۔پرویز الٰہی نے کہا کہ مولانا فضل الرحمان ملیں گے تو پھر راز فاش کرنے بارے پوچھوں گا، امانت کا راز فاش کرکے خیانت نہیں کر سکتا۔انہوں نے کہا کہ حکومت اپنا کام کرے، اپوزیشن تحریک کو کوئی نہیں پوچھتا، اپوزیشن کا کام ہی ایوان کے اندر اور باہر شور شرابہ کرنا ہے جبکہ حکومت کا کام عوام کو ریلیف دینا ہے۔انہوں نے کہا کہ حکومت کے ساتھ اتحادکے معاملات سلجھ چکے ہیں ہم نے نیک نیتی سے اتحاد کیا ہے، کوئی وجہ نہیں کہ حکومت اپنے وعدے پورا نہ کرے۔ پہلے بھی حکومت سے معاملات طے پا گئے تھے، صرف کمیٹی تبدیل کرنے پر ابہام پیدا ہوا تھا۔جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق آل پاکستان کلرکس ایسوسی ایشن کے ڈویژنل صدرچوہدری امتیازاحمدتتلہ،جنرل سیکرٹری چوہدری ذوالفقارعلی کاہلوں، سینئرنائب صدر میاں مقصود احمد،چیئرمین رانا یاسرخورشید، نائب شہبازاحمد جٹ، صوفی عبدالحفیظ،وارث گجر، چوہدری جاوید، شاہدامین، قاسم نور، سعادت بلوچ، آصف گل،چوہدری قاسم،جمیل خان خٹک، شیخ جمیل،راضون چٹھہ،یٰسین بلوچ، پرویزبسرا،حکیم خان نیازی، صدف اشرف اوردیگررہنماؤں نے دوارب روپے کے حکومتی مجوزہ منی بجٹ کو مسترد کرتے ہوئے اسے ملازم کش قراردے دیا۔چوہدری امتیازاحمدتتلہ اورجنرل سیکرٹری چوہدری ذوالفقارعلی کاہلوں نے موجودہ مہنگائی پر سخت تشویش کا اظہارکرتے ہوئے کہاکہ گیس،بجلی،تیل پر سبسڈی دے کر مہنگائی کو کنٹرول کیاجاسکتاہے۔وزیراعظم کے مہنگائی پیکیج سے غریب آدمی اورچھوٹےسرکاری ملازمین کو کوئی ریلیف نہیں ملے گا،گیس،بجلی کے بلوں کی ادائیگی کے بعدچھوٹے ملازم کے پاس چولہاچلانے کی سکت نہیں رہتی،علاج معالجہ،بچوں کی تعلیم خواب بنتی جاری ہے،چوہدری ذوالفقارعلی کاہلوں نے کہاکہ دوارب روپے کا منی بجٹ زندہ درگورکرکے رکھ دے گا،اگروزیراعظم کو واقعی چھوٹے ملازمین سے ہمدری یاانکا احساس ہے توانہیں بھی افسران کی طرح مہنگائی الاؤنس دیاجائے تاکہ انکی مشکلات میں بھی کمی آسکے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں