0

ترک صدر طیب آردگان کا دورہ پاکستان ۔۔۔۔ ملک کو معاشی طور پر کیا بڑا فائدہ ہونے والا ہے ؟بنی گالہ میں جشن کا سماں ، پاکستانیوں کو بڑی خوشخبری سنا دی گئی

راولپنڈی(ویب ڈیسک)چیئرمین پنجاب سرمایہ کاری بورڈ سردار تنویر الیاس خان نے کہاہےکہ ترک صدر رجب طیب اردگان کادورہ پاکستان دونوں ملکوں کےمابین گہرے تاریخی برادرانہ تعلقات کومزیدمستحکم کرے گا، ترک صدر کےدورہ سےپاکستان اورترکی کےدرمیان تجارتی تعاون کوفروغ ملے گااورباہمی سرمایہ کاری میں گرانقدر اضافہ ہوگا،پوری قوم ترکی کے صدر کو خوش آمدید کہنے کے لیے دید و دل فرشِ راہ کیے ہوئے ہے۔اسلام آباد میں ایوان ہائے صنعت و تجارت کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئےسردارتنویرالیاس نےکہاکہ وزیراعظم عمران خان اور ترک صدررجب طیب اردگان کے مابین ملاقات میں خطےمیں امن وسلامتی اور ترقی کے علاوہ اور باہمی تعلقات اور عالمی امور بھی زیربحث آئیں گے۔انہوں نےکہا کہ پنجاب حکومت ترک سرمایہ کاروں اور تاجروں کو ہر ممکن سہولیات فراہم کر رہی ہے،امیدکی جاتی ہے کہ وہ صوبہ پنجاب میں موجود سرمایہ کاری کےمواقع سےبھرپور فائدہ اٹھائیں گے، جس سے دونوں ملکوں کی عوام کےدرمیان موجود برادرانہ تعلقات مزیدمستحکم ہونگے۔انہوں نےکہاکہ ترک صدر کےدورہ سےپاکستان اورترکی کےدرمیان تجارتی تعاون کوفروغ ملے گااورباہمی سرمایہ کاری میں گرانقدر اضافہ ہوگا۔سردار تنویرالیاس نےکہاکہ ترک صدر کا دورہ پاکستان دونوں ملکوں کی ترقی میں اہم سنگ میل ثابت ہوگا،باہمی تجارت اور سرمایہ کاری سے دونوں ملکوں کے عوام مستفید ہوں گے اور ان کے باہمی روابط مزید مضبوط ہوں گے۔ جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق گورنر سندھ عمران اسماعیل کا کہنا ہے کہ وزیراعظم کے باعث معیشت میں 14 ارب ڈالرز آئے ،سیاحت کے شعبہ میں 200 فیصد اضافہ دیکھا جارہا ہے، 2023 میں دنیا کی کل معیشت کا 70 فیصد سنبھالنے والے 20 ممالک میں پاکستان بھی شامل ہوگا۔ تفصیلات کے مطابق گورنرسندھ عمران اسماعیل کا کہنا ہے کہحکومت صنعت کاروں کی مشکلات سے بخوبی آگاہ ہے۔حکومت صنعت کاروں اور تاجروں کو سہولیات فراہم کرنے کے لئے بھرپورعملی اقدامات یقینی بنارہی ہے ۔ گورنر سندھ کا کہنا ہے کہ موجودہ حکومت نے جب اقتدار سنبھالا اس وقت ملکی معیشت انتہائی خراب حالت میں تھی لیکن وزیراعظم کے وژن ان کی ٹیم کی شب وروز محنت کے باعث ملکی معیشت میں 14 ارب ڈالرز کا اضافہ ہوا، اگر یہ رقم نہ ہوتی تو آج حالات خوفناک حد تک خراب ہو سکتے تھے ۔عمران اسماعیل کا کہنا ہے کہ بدقسمتی سے حکومت کے اچھے کاموں کی تشہیر نہیں کی جارہی ، حکومتی اقدامات کے ثمرات ظاہر ہونا شروع ہوگئے ہیں ورلڈ بینک کے مطابق 2023 میں دنیا کی کل معیشت کا 70 فیصد سنبھالنے والے 20 ممالک میں پاکستان بھی شامل ہوگا ،کاروبار میں آسانیاں فراہم کرنے والے ممالک کی فہرست میں بھی پاکستان نی28 درجہ ترقی کی ہے جبکہ سیاحت کے شعبہ میں 200 فیصد اضافہ دیکھا جارہا ہے اسی طرح دیگر مثبت اقدامات ہیں ۔حکومت اور صنعت کاروں کے درمیان اعتماد کے فقدان کے تاثر کو ختم کرنے کے لئے بھرپور اقدامات اٹھائے جارہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ قومی ترقی میں صنعتوں کا کلیدی کردار ہے،موجودہ حکومت صنعتوں کی فعالیت اور تجارت بڑھانے کے لئے بھرپور اقدامات یقینی بنارہی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں