تیسری شادی مہنگی پڑگئی۔۔۔دلہا کی پہلی اور تیسری بیوی کے رشتہ داروں نے تقریب میں آکر ایسا کام کر ڈالا کہ شہر بھر میں خوف پھیل گیا

کراچی (ویب ڈیسک) کراچی میں شہری کو تیسری شادی کرنا مہنگا پڑگیا اور پہلی بیوی اور اس کے اہلخانہ نے دلہا کی تقریب کے شرکاء کے سامنے درگت بنا ڈالی تفصیلات کے مطابق کراچی کے نارتھ ناظم آباد میں شادی ہال میں آصف نامی شخص کے ولیمے کی تقریب جاری تھی کہ اچانک اس کی پہلی ابتدائی طور پرسابقہ بیوی کا الزام ہے کہ شوہر بنا بتائے تیسری شادی کر رہا تھا۔ آصف کی بیوی نے اپنے شوہر کی تیسری شادی کا پول کھولا تو جو دُلہن والے پہلے دلہا میاں کی خوب آؤ بھگت کررہے تھے۔ انہوں نے ہی دُلہے کی خوب دُرگت بنائی اور کپڑے ہی پھاڑ ڈالے۔ بعد میں پہلی بیوی اور اسکے رشتہ داروں نے خوب ہاتھ صاف کیا۔دلہا میاں نے پہلے دلہن والوں سے مار کھائی تو رہی سہی کسر پہلی بیوی اور اسکے رشتہ داروں نے پوری کردی جنہوں نے پہلے دلہا میاں کی ہال میں مہمانوں کے سامنے آصف کی پھینٹی لگادی اور کپڑے پھاڑ ڈالے۔ دلہا کے کپڑے تار تار ہوگئے جس پر وہاں موجود لوگوں نے اسکے نیم برہنہ جسم کو ٹیبل کے کور سے ڈھانپا۔ پہلی بیوی مدیحہ کا کہنا تھا کہ آصف اور اس کے گھر والوں نے جھوٹ بولا کہ وہ حیدرآباد جارہا ہے اور یہاں وہ شادی رچا تھا، آصف نے پہلے سے دو شادیاں کی ہوئی تھیں اب وہ پھر بتائے بغیر چھپ کر تیسری شادی کر رہا تھا۔مدیحہ نے بتایا کہ آصف رفیق سے اس کی 2014 میں شادی ہوئی تھی جس سے اس کا ایک بیٹا بھی ہے، اس نے مجھ سے چھپ کر جناح یونیورسٹی میں ملازمت کرنیوالی لڑکی سے دوسری شادی کی۔ جب مجھے اس شادی کے بارے میں معلوم ہوا تو اس نے مجھ سے معافی مانگی اور کہا کہ میں تمہارے ساتھ ہی رہوںگا جس پر میں نے اسے معاف کر دیا لیکن اب اس نے کچھ دوبارہ جھوٹ بول کر تیسری شادی بھی کرلی۔ ہنگامہ آرائی کی اطلاع ملنے پر پولیس میرج ہال پہنچی جہاں اس نے دلہا کو سسرالی رشتے داروں کے تشدد سے بچایا اور تھانے منتقل کردیا اور دلہے کو سرکاری مہمان بنادیا ۔اس دوران دُلہا کی دوسری بیوی بھی تھانے پہنچ گئی اور اپنی بپتا میڈیا کو سنادی۔پولیس نے سب پارٹیوں کو عدالت جانے کا مشورہ دیا اور دلہے کو رہا کردیا ۔ دلہے نے تھانے سے نکل کر بھاگنے کی کوشش کی تو قسمت کے مارے دلہا کا سسرالی رشتہ داروں نے پھر بھی پیچھا نہ چھوڑا اور اس کا تعاقب کرتے رہے ۔جب وہ جان بچانے لیے ایک گاڑی کے نیچے چھپ گیا تو شہریوں نے اسے گاڑی کے نیچے نکالا تو اسکے سسرالی رشتہ داروں نے ایک بار پھر دبوچ لیا اور ایک مرتبہ پھر تشدد کا نشانہ بنایا لیکن وہاں موجود شہریوں نے اس کی جان بچائی دوسرئ جانب آصف رفیق کا کہنا ہے کہ اس نے تیسری شادی کرکے کوئی غیر قانونی کام نہیں کیا کیونکہ وہ پہلی بیوی مدیحہ کو وہ طلاق دے چکا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں