حکومت نے مریم نواز کی لندن روانگی کی صورت میں پلان بی بنا لیا

لاہور (نیوز ڈیسک) سینئر صحافی حامد میر نے کہا ہے کہ ن لیگ کامہنگائی کیخلاف احتجاج مریم نواز کیلئے ہے،میرے پاس اطلاعات یہ ہیں کہ عمران خان نے مریم نوازکو باہر بھیجنے والوں کو بتا دیا ہے کہ مریم نواز کو باہر نہیں جانے دیا جائے گا، اسی لیے ن لیگ نے احتجاج شروع کردیا ہے۔انہوں نے نجی ٹی وی کے پروگرام میں تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ مریم نواز میرا ایشو نہیں ہے، میں پاکستان میں رہتا ہوں، میرا مسئلہ مہنگائی اور عوامی مسائل ہیں، مریم نوازکے باہر جانے کا مسئلہ ن لیگ کا ہے، ن لیگ نے اس کو بڑا ایشو بنایا ہوا ہے۔ن لیگ کی مہنگائی کیخلاف تحریک مریم نواز کے باہر جانے کیلئے ہے۔ جب کہ حامد میر اپنے کالم میں اس حوالے سے لکھتے ہیں کہ ایک وزیر سے میں نے پوچھا کہ مریم نواز کو لندن جانے کی اجازت ملے گی یا نہیں؟ وزیر صاحب نے کہا کہ ہو سکتا یے کہ وہ عدالت سے اجازت لے لیں تو اس صورت میں ہم ان کو نہیں روک سکتے لیکن اگر وہ چلی گئیں تو پھر مسلم لیگ ن کے کچھ رہنماؤں پر نئے مقدمات ضرور بنیں گے تاکہ عوام کو کسی ڈیل کا تاثر نہ ملے۔جب کہ مسلم لیگ ن پنجاب کے صدر رانا ثناء اللہ کا اس حوالے سے کہنا ہے کہ مریم نواز کے خلاف جو مقدمہ قائم کیا گیاہے وہ جھوٹا اور بے بنیاد ہے ، یہ تو کہتے تھے کہ ہم خواتین کے خلاف مقدمات نہیں بناتے لیکن مریم نواز کو گرفتا کیا گیا ، اب عدالت نے انہیں ضمانت دی ہے حکومت کو کوئی حق نہیں پہنچتا کہ وہ انتظامی حکم کے تحت ان کی نقل و حرکت پر پابندی لگائے او ران کا نام ای سی ایل میں شامل کرے ۔مریم نواز کا حق ہے کہ وہ اپنے والدکی تیماری داری کریں اور ہارٹ سرجری کے موقع پر ان کے پاس موجود ہوں اور انہیں اپنے والد کی تیمارداری سے روکنا ظلم و زیادتی اور بد ترین سیاسی انتقام ہے ۔ خیال رہے کہ لاہور ہائیکورٹ نے سابق وزیراعظم نواز شریف کی صاحبزادی و مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز کا نام ای سی ایل سے نکالنے اور پاسپورٹ واپسی کیلئے درخواست سماعت کیلئے مقرر کر دی ہے۔جسٹس علی باقر نجفی اور جسٹس طارق سلیم شیخ پر مشتمل بنچ 18 فروری کو مریم نواز کی درخواست پر سماعت کرے گا۔ جسٹس طارق عباسی اور جسٹس چودھری مشتاق احمد کا بنچ تبدیل ہونے کے باعث کیس نئے بنچ میں منتقل کر دیا گیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں