نہ سال نہ مہینے نہ ہفتے ۔۔۔۔ وزیراعظم کب مہنگائی کے مکمل خاتمے کا اعلان کرنے والے ہیں ؟ اسد عمر نے پاکستانیوں کو شاندار خبر دے دی

اسلام آباد (ویب ڈیسک) وزیر برائے منصوبہ بندی اسد عمر نے کہا ہے کہ آئی ایم ایف نے پورا ترقیاتی بجٹ استعمال کرنے کے لئے کہا ہے اور ہم ایسا ہی کریں گے، ایم کیو ایم والے ساتھی ہیں اور کراچی میں کام کے لیے ان کا کوئی دباؤ نہیں ہے۔ رواں مالی سال وفاقی ترقیاتی منصوبوں پر 188 ارب روپے خرچ ہو چکے ہیں اور اب تک ترقیاتی بجٹ سے 429 ارب روپے جاری کرنے کی منظوری ہو چکی ہے، کراچی ایم کیو ایم کا نہیں بلکہ تحریک انصاف کا شہر ہے۔ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ 2021سے 2023تک نیشنل گروتھ سٹرٹیجی بنانے جا رہے ہیں ، جاری منصوبوں کی مانیٹری انتہائی کمزور ہے ، چھ ماہ میں منصوبوں کی مانیٹرنگ کو بھی بڑھائیں گے ،نیشنل اکنامک کونسل کی کمیٹی بنانے کی تجویز بھی زیر غور ہے ۔ پلاننگ کمیشن کا نیا پلان بنا رہے ہیں ، ری وائٹلائزیشن سٹریٹجی کے تحت پلان بنایا جائے گا، سی پیک پر سائنس وٹیکنالوجی کا جوائنٹ ورکنگ گروپ بنا رہے ہیں، گوادر ایکسپو کا انعقاد کیا جائے گا ، سی پیک میں تھرڈ پارٹی کی شمولیت کیلئے بھی فریم ورک ترتیب دیا جائے گا ۔ 2018-19میں 83فیصد ترقیاتی بجٹ استعمال ہوا ، منصوبوں کی مانیٹرنگ اور ایویلوشن کو ری ویمپ کررہے ہیں۔ چھ ماہ میں ری ویمپ کا نظام تیار ہو جائے گا۔وزیر اعظم سے منظوری کیلئے این ای سی کی ذیلی کمیٹی کے قیام کی سمری بھیجیں گے،تعمیرات کے شعبے میں پراجیکٹ ڈویلپمنٹ بورڈ بنا رہے ہیں۔پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ اتھارٹی کو ری سٹرکچر اور آپریشنلائز کرنے جارہے ہیں۔اسد عمر نے کہاکہ سی پیک سائنس و ٹیکنالوجی پرجوائنٹ ورکنگ گروپ بنائے گا، گوادر ایکسپو 2020 منعقد کریں گے،مراعات پر مبنی خصوصی اقتصادی زون ایکٹ پر کام شروع کرنے جارہے ہیں۔ زراعت میں ریسرچ اینڈ ڈویلپمنٹ کو دوبارہ سے فعال بنانے کی ضرورت ہے۔کاٹن کی پیداوار میں کمی ایک بحران بنتا جارہا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں