میرا ماہرہ کے سامنے ان کیخلاف دئیے گئے بیانات سے پھرمکرگئیں اور ۔۔۔۔

اسلام آباد(نیوز ڈیسک)اداکارہ میرا ماہرہ خان سے متعلق دئیے گئے بیانات سے ایک بار پھر مکر گئیں اور کہا کہ میں نے ماہرہ خان سے متعلق کچھ غلط نہیں کہا۔گزشتہ روزدبئی میں پیسا ایوارڈز 2020 کا میلہ سجا جس میں ماہرہ خان، میرا جی، عائشہ عمر، شہریار منور، مومنہ مستحسن، عروہ حسین، فرحان سعید، سارہ خان، حرا مانی، علی ظفر، ثنا جاوید، زارا نور عباس، اشنا شاہ، اداکارہ ریما، آئمہ بیگ اور صدف کنول سمیت پاکستان شوبز انڈسٹری کےتقریباً تمام اسٹارز نے شرکت کی۔تقریب کے دوران تمام فنکاردیدہ زیب اور جھلمل کرتے لباسوں میں نہایت خوش اورایک دوسرے سے ہنسی مذاق کرتے ہوئے نظرآئے۔ تاہم ماحول اس وقت مزید خوبصورت ہوگیا جب ماہرہ خان اورمیرا جی ایک دوسرے کے ساتھ خوشگوارماحول میں بات کرتی نظرآئیں اوردونوں نے نہایت دوستانہ ماحول میں باتیں کیں۔ اس وقت اداکارشہریارمنوربھی وہیں موجود تھے اوردونوں کی باتوں کا خوب لطف لے رہے تھے۔ماہرہ خان نے میرا جی سے شکوہ کرتے ہوئے کہا زندگی میں پہلی بار میں میرا جی آپ سے خوش نہیں ہوں، میرا نے کہا کیوں میں نے ایسا کیا کردیا۔ جس پر ماہرہ نے کہا آپ کو یاد ہے ہم دونوں بہت اچھی دوست بن گئے تھے، میرا جی نے کہا ہاں اور شہریار منور نے بھی کہا ہاں مجھے بھی یاد ہے۔ ماہرہ نے کہا لیکن مجھ سے کسی نے کہا ہے کہ آپ نے پھرمیرے بارے میں کچھ کہا ہے۔ماہرہ کی اس بات پر میرا نے فوراً کہا میں قسم کھاتی ہوں ماہرہ میں نے تمہارے بارے میں کچھ نہیں کہا جس پر شہریار منور نے کہا میرا جی کیا واقعی یہ سچ ہے جس پر میرا نے کہا ہاں یہ بالکل سچ ہے۔ بعد ازاں شہریار منور نے کہا میرا جی آج’’ آپ کی عدالت‘‘ میں ہیں۔واضح رہےکہ میرا ماضی میں کئی بار ماہرہ خان کے بارے میں متنازع بیانات دے چکی ہیں۔ ایک بارانہوں نے کہا تھا کہ ماہرہ خان کو شاہ رخ خان نے اپنی فلم میں کاسٹ کیا جب کہ ماہرہ اس قابل نہیں تھیں بعد ازاں انہوں نے اپنے بیان سے مکرتے ہوئے اس وقت ماہرہ خان کی تعریفیں شروع کردی تھیں جب ماہرہ نے افغان مہاجرین کے کیمپ کا دورہ کیا تھا۔ اس کے علاوہ ایک موقع پر میرا نے ماہرہ خان کو پاکستان کا فخر بھی قرار دیا تھا۔تاہم میرا نے ایک بار پھرماہرہ سے متعلق اپنے بیانات سے یوٹرن لیتے ہوئے حال ہی میں ایک ویب سائٹ کو دئیے گئے انٹرویو میں کہا تھا کہ میں ماہرہ سے زیادہ باصلاحیت ہوں لیکن پھر بھی شوبز انڈسٹری میں ماہرہ کو بلاوجہ اہمیت دی جاتی ہے اورمیرے حصے کا کام بھی انہیں دے دیاجاتا ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں