وہ دودھ جسے پینے سے آپ کی عمر میں اضافہ ہوجاتا ہے، سائنسدانوں کا تازہ تحقیق میں حیرت انگیز انکشاف

لندن(نیوز ڈیسک)عام طور پر دودھ کو ابال کر اس سے بالائی اتار لی جاتی ہے یا پھر مشین میں ڈال کر اس سے کریم نکال لی جاتی ہے،مگر لوگ ایسے دودھ کو ترجیح نہیں دیتے۔ وہ سمجھتے ہیں کہ جس سے کریم ہی نکال لی گئی، اس میں باقی کیا بچا لیکن اب سائنسدانوں نے نئی تحقیق میںبالائی یا کریم کے بغیر دودھ پینے کا ایک انتہائی شاندار فائدہ بتا دیا ہے۔ میل آن لائن کے مطابق سائنسدانوں نے بتایا ہے کہ بالائی یا کریم نکال کر دودھ پینے سے انسان کی جوانی دیرپا ہوتی ہے۔ اس کے چہرے پر عمر رسیدگی کے آثار کئی سال تاخیر سے نمودار ہوتے ہیں اور وہ بالائی اور کریم نکالے بغیر دودھ پینے والوں کی نسبت زیادہ جوان رہتا ہے۔اس کی مرکزی وجہ بیان کرتے ہوئے برمنگھم یانگ یونیورسٹی سائنسدانوں نے بتایا کہ بالائی یا کریم کے بغیر دودھ پینے سے انسان کا ڈی این اے دوسروں کی نسبت ساڑھے چار سال نوجوان رہتا ہے۔ اس تحقیق میں سائنسدانوں نے 6ہزار لوگوں پر تجربات کیے۔ ان لوگوں کے جینز کا تجزیہ کیا گیا اور ان سے ان کی غذائی عادات کے متعلق سوالات کیے گئے اور پھر ان کا ان کے جینز کے ساتھ تجزیہ کرکے نتائج مرتب کیے گئے۔تحقیقاتی ٹیم کی سربراہ پروفیسر لیری ٹکر کا کہنا تھا کہ ”جس دودھ سے بالائی یا کریم اتار لی جائے اس میں 0.3فیصد چکنائی ہوتی ہے جبکہ اصلی حالت میں دودھ کے اندر 3.6چکنائی ہوتی ہے۔ دودھ میں جو سیچوریٹڈ چکنائی پائی جاتی ہے وہ انسانی خلیوں پر دباؤ ڈالتی اور انہیں تباہ کرتی ہے جس کے نتیجے میں جسم کے نشوز کی موت ہونے کی شرح بہت زیادہ بڑھ جاتی ہے۔ جو لوگ بالائی یا کریم اترا دودھ پیتے ہیں ان میں دودھ کا یہ منفی اثر نہیں ہوتا اور ان کا ڈی این اے پہلی قسم کے لوگوں کی نسبت ساڑھے چار سال تک زیادہ جوان رہتا ہے۔ “

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں