میں نے اینکرز کوتھپڑ کیوں مارے ؟وفاقی وزیر چوہدری فواد حسین نے غصے میں آنے کی بالآخروجہ بتادی

اسلام آباد(ویب ڈیسک )اداکارہ مہوش حیات کو مارچ 2019 میں حکومت پاکستان کی جانب سے فلموں میں شاندار اداکاری پر تمغہ امتیاز ایوارڈ سے نوازا گیا تھا۔مہوش حیات کو تمغہ امتیاز دیے جانے پر کئی لوگوں نے اداکارہ کو تنقید کا نشانہ بنایا تھا اور ایک سوشل میڈیا پلیٹ فارم نے تو دعویٰ کیا تھا کہ اداکارہ کو مذکورہ ایوارڈ پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے ایک رہنما سے تعلقات کی وجہ سے دیا جا رہا۔سوشل میڈیا پلیٹ فارم کے دعوے کے بعد جہاں مہوش حیات نے مذکورہ پلیٹ فارم کو تنقید کا نشانہ بنایا تھا وہیں کئی اداکار بھی مہوش حیات کی حمایت میں سامنے آئے تھے۔مہوش حیات کو 23 مارچ کو ایوان صدر اسلام آباد میں ہونے والی تقریب میں تمغہ امتیاز دیا گیا تھا جس پر لوگوں نے انہیں آن لائن تنقید کا نشانہ بھی بنایا تھا۔اگرچہ انہیں تمغہ امتیاز ملے ہوئے تقریبا ایک سال کا عرصہ گزر چکا ہے تاہم اب بھی انہیں اس پر تنقید کا نشانہ بنایا جاتا ہے۔تاہم اب پی ٹی آئی کے رہنما اور سائنس و ٹیکنالوجی کے وفاقی وزیر چوہدری فواد حسین نے اعتراف کیا ہے کہ انہوں نے ہی مہوش حیات کو تمغہ امتیاز دینے کی سفارش کی تھی۔نجی ٹی وی چینل ’جیو نیوز‘ کے پروگرام ’ایک دن جیو کے ساتھ‘ میں میزبان سہیل وڑائچ سے بات کرتے ہوئے چوہدری فواد حسین نے مہوش حیات کی اداکاری کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ انہیں لگا کہ جہاں اداکارہ کی فلم ’پنجاب نہیں جاؤں گی‘ نے ریکارڈ کمائی کی وہیں ان کی اداکاری بھی شاندار ہے۔وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ اگرچہ وہ اس وقت تک مہوش حیات سے نہیں ملے تھے تاہم پھر بھی انہوں نے ان کی اداکاری کی وجہ سے ان کی سفارش کی۔چوہدری فواد حسین نے یہ اعتراف بھی کیا کہ ایوارڈ کی سفارش کے بعد وہ مہوش حیات سے ملے۔پروگرام میں بات کرتے ہوئے فواد چوہدری نے ٹی وی اینکرز

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں