وفاقی وزیر زرتاج گل نے رنگ گورا کرنے والی کریموں کی حقیقت بتا دی

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) وزیر مملکت برائے موسمیاتی تغیرات زرتاج گل نے کہاہے کہ رنگ گورا کرنے والی کریموں میں موجود کیمیکلز صحت کے لیے نقصان دہ ہیں،وہ شفا انٹرنیشنل ہسپتال میں کینسر سے آگاہی پرمنعقدہ سیمینار سے خطاب کررہی تھیں۔کینسر سے دنیا بھر میں سالانہ تقریبا 96لاکھ افراد موت کے منہ میں چلے جاتے ہیں،جو کہ ایچ آئی وی/ایڈز، ملیریا اور ٹی بی کو ملا کرمجموعی طور پر ہونے والی اموات سے بھی زیادہ ہیں۔ ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کے ماہرین،بد احتیاطی کی صورت میں 2030تک کینسر سے ہونے والی اموات کے 13ملین تک بڑھ جانے کا امکان ظاہر کرتے ہیں۔اس سے پہلے اموات کی سب سے بڑی وجہ امراضِ قلب تھی۔رنگ گورا کرنے والی کریمیں ۔۔۔زرتاج گل نے ایسی بات کر دی زرتاج گل نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ شہروں میں سموگ، آلودہ پینے کا پانی، خوراک میں کیمیکلز، پلاسٹک بیگز کا استعمال، ہوا کا کمتر معیار، وغیرہ کے باعث ہماری صحت متاثر ہوتی ہے، شفا انٹرنیشنل ایک ہسپتال ہوتے ہوئے بھی کینسر سے بچا ؤ کی آ گاہی کے لیے کو شا ں ہے جبکہ عمومی طور پر ہسپتا لو ں کی طرف سے ایسا رویہ کم دیکھنے میں ملتا ہے۔ انہوں نے مزید بتا یا کہ ان کی حکو مت کی طرف سے دیہی خواتین کے لیے کم توا نائی خرچ کرنے والے (Energy Efficient) چولہےمتعا رف کروا ئے جا رہے ہیں جو کہ خواتین کو نہ صرف سہولت فرا ہم کریں گے بلکہ ان کوسا نس اورآ نکھوں کے امرا ض سے بچا ؤ کا سبب بھی بنیں گے۔انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ ہماری حکومت ہم سب کیلئے صحتمند اور صاف ماحول بنانے میں پر عزم ہے۔اعزازی مہمان محمد عامر ذوالفقار خان (انسپکٹر جنرل پولیس) نے شفا انٹرنیشنل ہسپتال کی کینسر آگاہی کیلئے کاوشوں کو سراہا اورکینسر آگاہی کے پھیلاؤ میں اسلام آباد پولیس کی مدد کی یقین دہانی کروائی۔ شفا انٹرنیشنل ہسپتال اسلام آباد کے کنسلٹنٹ ریڈیشن آنکالوجسٹ، ڈاکٹر محمد فرخ نے کہا کہ ایک تہائی سے زائد کینسر کے کیسز سے بچاؤ ممکن ہے۔ مزید ایک تہائی کا علاج ہو سکتا ہے اگر جلد تشخیص اور درست علاج کر لیا جائے۔ وسائل کے لحاظ سے بچاؤ کی حکمت عملی، جلد تشخیص اور علاج سے ہم ہر سال 37لاکھ جانیں بچا سکتے ہیں۔ڈاکٹر فرخ نے کینسر کی 7انتباہی علامات مثلاً باتھ روم کی عادات میں تبدیلی، زخم جو ٹھیک نہ ہو، قدرتی سوراخوں سے غیر معمولی خون کا اخراج، چھاتیوں یا دیگر جگہوں میں سختی یاگلٹیاں، بد ہضمی اور نگلنے میں مشکل، مسلسل کھانسی اور آواز کا بیٹھنا،سے آگاہ کیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں