سڈنی، ڈرائیور نے 4 بچے کچل دیئے

سڈنی میں شراب کے نشے میں دھت ڈرائیور نے فٹ پاتھ پر کھڑے بچوں پر پک اپ ٹرک چڑھا دیا جس کے نتیجے میں 4 بچے جاں بحق ہوگئے۔

پولیس کے مطابق حادثے کے بعد غفلت، لاپرواہی، قتل عام اورشراب نوشی کے الزامات عائد کرتے ہوئے ڈرائیور کو گرفتار کرلیا گیا ہے ۔

پولیس کا کہنا ہے کہ حادثے میں جاں بحق ہونے والے بچوں میں 2 بچیاں ان کا بھائی اور ایک کزن شامل ہے ، جبکہ 3 بچے زخمی بھی ہوئے ہیں جنہیں اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔

ذرائع کے مطابق جاں بحق بچیوں کی عمریں 8 سے 12 سال کے درمیان تھیں، جبکہ بچے کی عمر 13 سال تھی ۔

حادثے میں جاں بحق ہونے والے 3 بہن بھائیوں کے والد دانیال عبدالله غم سے نڈھال ہیں، اس موقع پر ان کا کہنا تھا کہ وہ اپنے 3 بچوں سےمحروم ہوگئے ہیں، ان کا کزن بھی اپنی بیٹی سے ہاتھ دھو بیٹھا ہے۔

دانیال عبداللہ نے کہا کہ میں واقعے کے بعد محسوس کررہا ہوں جیسے اپنا ہوش کھوبیٹھا ہوں۔

انہوں نے کہا کہ میں اپنا قیمتی اثاثہ کھودینے کے بعد دیگر ڈرائیورز سے صرف یہ اپیل کرنا چاہتا ہوں کہ گاڑیاں احتیاط سے چلائیں ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں