0

بکرے کے گوشت میں کرونا وائرس پایا گیا یا نہیں ؟ پکی خبر آگئی

لاہور(ویب ڈیسک ) پنجاب فوڈ اتھارٹی نے کورونا وائرس کے نام سے خوف و ہراس پھیلانے والی جھوٹی سوشل میڈیا رپورٹ کی تردید کرتے ہوئے کہا پنجاب فوڈ اتھارٹی کے بکرے کے گوشت اور کورونا وائرس کے حوالے سے کوئی پوسٹ نہین کی گئی، ڈی جی فوڈ اتھارٹی عرفان میمن نے کہا بکرے کے گوشت اور کورونا وائرس میں ابھی تک کوئی تعلق سامنے نہیں آیا ۔ عوام سے گزارش ہے کہ درست معلومات کیلئے پنجاب فوڈ اتھارٹی کا آفیشل فیس بک پیج لائیک کریں۔ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق چین میں کرونا وائرس کی وبا سے ہلاکتوں کی تعداد ایک سو ستر ہو گئی، سات ہزار سات سو گیارہ افراد متاثر ہیں، وائرس 16 ممالک تک پھیل چکا ہے، وائرس پر گلوبل ایمرجنسی نافذ کرنے سے متعلق عالمی ادارہ صحت کا اجلاس آج ہو گا۔ چین میں کروناوائرس سے ہلاکتوں میں مسلسل اضافہ، مہلک وبا نے ایک سو ستر افراد کی جان لے لی جبکہ سات ہزار سات سو گیارہ افراد مختلف ہسپتالوں میں زیر علاج ہیں۔ تبت میں بھی کرونا کا مریض سامنے آ گیا۔ سولہ ممالک تک کرونا وائرس پھیل چکا ہے۔عالمی ادارہ صحت کا کرونا کو عالمی وبا قرار دینے پر اجلاس آج ہو گا۔ کرونا وائرس کا کوئی اسپیشل علاج نہیں اور نہ ہی اس کے لیے کوئی ویکسین ہے۔ ہبئی صوبے میں لوگ گھروں میں بند ہیں، کمپنیوں نے اپنے ملازمین سے کہا ہےکہ وہ گھروں میں رہ کر کام کریں۔ آسٹریلیا، امریکا، جاپان، جنوبی کوریا، برطانیہ، کینیڈا، فلپائن اور ملائشیا کی جانب سے اپنے شہریوں کو واپس بلانے کا سلسلہ بھی جاری ہے۔ امریکی صدر نے کرونا وائرس پر امریکی حکام سے بریفنگ لی۔ ڈونلڈ ٹرمپ نے ٹویٹ کی کہ ان کی ایجنسیاں چین کے ساتھ مل کر کام کر رہی ہیں، صورت حال کو مانیٹر کیا جارہا ہے۔ امریکا کے پاس دنیا کے سب سے بہترین ماہرین ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں