چھابڑی فروشوں کیلئے بھی قانونی مسودہ تیار، 500 روپے ماہانہ فیس مقرراور۔۔۔

اسلام آباد(نیوز ڈیسک) وفاقی حکومت نے چھابڑی فروشوں کے لیے بھی قانونی مسودہ بنالیا۔ بغیر لائسنس کاروبار بغیر ممکن نہیں ہوگا جبکہ پانچ سو روپے ماہانہ فیس مقرر کر دی گئی۔نجی ٹی وی چینل نے چھابڑی فروشوں کے لیے تیار مسودہ قانون کی کاپی حاصل کرلی۔ مسودے کے مطابق 14 سال سے کم عمر فرد چھابڑی نہیں لگا سکے گا، جگہ جگہ پھر کر اشیا نہیں بیچی جا سکیں گی، لائسنس کی مدت پانچ سال ہوگی، لائسنس کسی اور کے نام منتقل بھی نہیں ہو سکے گا، بلدیاتی حکومت چھابڑی فروش کا علاقہ بدل سکے گی، عمل نہ کرنے پر سامان ضبط کرلیا جائے گا۔بل کے متن میں کہا گیا کہ نقل مکانی پر رضامندی کی صورت میں بلدیاتی عملہ سامان اور نقصان ادا کرنے کا پابند ہے، بے جا تنگ کرنے پر بلدیاتی حکومتی عملہ کے لیے بھی سزا کی تجویز کی گئی ہے، کسی وجہ کے بغیر اشیا ضبط کرنے پر متعلقہ اہلکار کو 20 ہزار جرمانہ ہو گا، چھابڑی فروش کی اشیا ضبط کرنا قابل ضمانت جرم ہوگا

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں