’’میں مسلمان ہوں اور میری بیوی ہندو اس لیے۔۔۔ ‘‘ شاہ رُخ خان نے بڑا اعلان کر دیا، پوری دُنیا میں موجود مداح دنگ رہ گئے

ممبئی ( ویب ڈیسک) بالی ووڈ کے کنگ خان شاہ رُخ خان کا کہنا ہے کہ ان کے گھر میں مذہب کی بات نہیں کی جاتی ہے، ہمارے گھر میں کبھی بھی ہندو یا مسلم ککی کوئی بات نہیں ہوئی، میری بیوی ہندو ہے، میں مسلمان ہوں اور ہمارے بچے ہندو ستانی ہیں، میں نہیں چاہتا کہ مذہبی اختلافات کی وجہ سے ہم الگ ہوں۔ تفصیلات کے مطابق شاہ رُخ خان نے ایک رئیلٹی شو میں شرکت کی، اس شرکت کے دوران شا رخ خان کا کہنا تھا کہ ہمارے درمیان کبھی ہندو مسلمان کی بات ہی نہیں کی۔ میری بِیو ہندو ہے ، مائی مسمان ہوں اور صرف جو بچے ہیں ، وو ہندوستانی ہیں۔ شاہ رخ خان کا مزید کہنا تھا کہ جب وہ اسکول گئے تو انن سے پوچھا گیا کہ تممہارا مذہب کیا ہے؟ بہن سے بھی یہی سوال کیا گیا تو ہم نے اپننے والد سے پوچھا کہ پاپا ہم سکول میں اپنا کونسا مذہب لکھوائے، میرے بچوں کو بھی انہی سوالات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے، میری بیٹی ایک بار میرے پاس آئی اور پوچھا کہ ہمارا مذہب کیا ہے ؟ جس کا جواب میں نے اُسے یہ دیا کہ ہم صرف ہندوستانی ہیں اور ہمارا کوئی مذہب نہیں ہے۔ شاہ رخ خان کا کہنا ہے کہ میں پہلے بھی کئی مرتبہ واضح کر چکا ہوں کہ میرا مذہب کیا ہے، میرے خاندان کے لوگ اسی مذہب کے تحت اپنے تہوار مناتے ہیں، میں نے اپنے ببچوں کے ناموں کے ساتھ بھی لفظ ” خان ” نہیں استعمال کیا تاکہ انہیں بھی کسی قسم کی کوئی پریشانی نہ ہو اور وہ اپنی زندگی آسانی سے گزار سکیں، اپنے مذہب کے حوالے سے شاہ رخ خان کا کہنا تھا کہ میرا مذہب اسلام ہے لیکن میں مذہبی نہیں ہوں، میں اسلامی اصولوں پر یقین رکھتا ہوں ، اور مذہب اسلام میں جتنی آزادی ہے میں اتنی ہی استعمال کرتا ہوں ۔اس سے زیادہ مجھے کچھ نہیں پتہ

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں