شہریوں‌کی زندگی بہت قیمتی ہے ….. خلاف ورزی پر سخت سزا دینےکا فیصلہ ،جانئے

ریاض (ویب ڈیسک )سعودی محکمہ ٹریفک کی جانب سے اعلان کیا گیا ہے کہ انڈر پاس میں سے گزرتے وقت گاڑی کی ہیڈ لائٹس روشن رکھنا لازمی ہو گا۔ جو لوگ اس خلاف ورزی کے مرتکب ہوں گے، اُنہیں 900 ریال کا بھاری جرمانہ عائد ہو گا، جو کہ پاکستانی کرنسی میں 37 ہزار روپے کی رقم بنتی ہے۔ سعودی محکمہ ٹریفک کے مطابق نیا قانون متعارف کرا دیا گیا ہے جس کے تحت انڈر پاس میں گاڑیوں کی لائٹ روشن نہ کرنا ٹریفک قوانین کی خلاف ورزی ہوگی اور خلاف ورزی کے مرتکب افراد پر جرمانہ 900 ریال عائد کیا جائے گا۔سعودی محکمہ ٹریفک نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر جاری اپنے پیغام میں کہا کہ ‘انڈر پاس میں بغیر لائٹ گاڑی چلانے سے ڈرائیورز اور دیگر مسافروں کی سلامتی کو خطرات پیدا ہوجاتے ہیں۔محکمہ ٹریفک نے کہا کہ بغیر لائٹ گاڑی چلانا خلاف ورزی ہے اور اس قانون پر باقاعدہ عمل درآمد ہوگا اور سزا بھی مقرر ہے۔اسی وجہ سے 500 ریال سے 900 ریال تک کا جرمانہ عائد کیا گیا ہے۔محکمہ ٹریفک کی جانب سے یہ بھی واضح کیا گیا ہے کہ حفاظتی بیلٹ نہ باندھنا ایک سنگین ٹریفک خلاف ورزی ہے۔ اس کا جرمانہ 150 ریال اورزیادہ سے زیادہ 300 ریال ہوگا۔جبکہ اگر کوئی ڈرائیور ایک ماہ کے دوران ایک سے زیادہ مرتبہ حفاظتی بیلٹ نہ باندھنے کا مرتکب پایا گیا تو اس پر جرمانے میں اضافہ ہو گا یا پھراس کی گاڑی 24 گھنٹے کے لیے محکمہ ٹریفک کی تحویل میں رہے گی بعض صورتوں میں دونوں سزائیں ایک ساتھ بھی دی جاسکتی ہیں۔محکمہ ٹریفک کے مطابق حفاظتی بیلٹ باندھنا ڈرائیور کے ساتھ والی سیٹ بیٹھے شخص کے لیے بھی لازمی ہے۔ اگر اس ضابطے کی پابندی نہ کی گئی تو اس کا جرمانہ بھی ڈرائیور کے نام پردرج ہو گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں