0

وہ لوگ جن کی تنخواہ وزیراعظم پاکستان سے بھی زیادہ ہے؟جانئے

لاہور (ویب ڈیسک) پنجاب اسمبلی کے ایوان میں چینی اور آٹا بحران پر خوب شور شرابا ہوا، حکومت اور اپوزیشن آمنے سامنے رہیں ،نعرے بازی اور خواتین کے نام لے کر طعنہ زنی کی جاتی رہی، جس سے ایوان مچھلی منڈی بنا رہا ۔ پنجاب اسمبلی کا اجلاس ڈپٹی سپیکر سردار دوست محمد مزاری کی زیر صدارت دو گھنٹے 6 منٹ کی تاخیر سے شروع ہوا ۔ اجلاس میں محکمہ سکول ایجوکیشن کے جوابات پارلیمانی سیکرٹری ساجد بھٹی نے دیئے ۔ پیف کے ملازمین کی تنخواہوں سے متعلق تفصیلات پنجاب اسمبلی میں پیش کی گئیں جن میں انکشاف ہوا کہ پیف کے منیجنگ ڈائریکٹر کی تنخواہ وزیراعظم عمران خان سے بھی زیادہ ہے ،منیجنگ ڈائریکٹر کی تنخواہ 7 لاکھ 32 ہزار روپے اور ڈپٹی منیجنگ ڈائریکٹر کی تنخواہ 5 لاکھ 75 ہزار ہے جبکہ ڈائریکٹر پیف 3لاکھ 14 ہزار ماہانہ تنخواہ لے رہے ہیں، پیف کے ماسٹر ٹرینر کو 90 ہزار روپے تنخواہ دی جارہی ہے ،ایڈیشنل ڈائریکٹر کی ماہانہ تنخواہ 2لاکھ 30 ہزار ، آفس بوائے اور ڈرائیور کی کم سے کم تنخواہ 32 ہزار روپے ماہانہ ہے ۔پنجاب اسمبلی میں سرکاری سکولوں کو سولر پر منتقل کرنے کے اقدامات کی تفصیلات پیش کی گئیں ،جن میں بتایا گیا کہ جنوبی پنجاب کے 11 اضلاع کے 10 ہزار 8 سو 61 سکولوں کو شمسی توانائی پر منتقل کیا جا رہا ہے ،22 اکتوبر 2019 تک 4 ہزار 6 سو 5 سکولوں کو شمسی توانائی پر منتقل کیا گیا ، منصوبے کو مکمل کرنے کیلئے 3 کروڑ 85 لاکھ 17 ہزار ڈالر خرچ ہونگے ۔ سابق صوبائی وزیر خوراک بلال یاسین نے وزرا کی کارکردگی پر سوالات اٹھا دیئے اور کہا کہ ایک وزیر کہتا ہے نومبر دسمبر میں گندم زیادہ کھائی جاتی ہے ،ملک میں گندم کا بحران ہے اگر بحران نہیں ہے تو وزیر اعظم نے کمیٹی کیوں بنائی ،تین لاکھ ٹن امپورٹ ہونیوالی گندم کو روکنا ہوگا، تین ماہ میں پچیس سے تیس روپے چینی کی قیمت بڑھی ،شوگرملز ایسوسی ایشن بہت مضبوط ہے وہ کسی وزیر کو اہمیت نہیں دیتی ۔عمران خان سوئٹزرلینڈ جاتے ہیں اور کہتے ہیں دوست کے خرچے پر گیا ہوں،ہم سے پیسے لے لیں لیکن عوام کو ریلیف دیں۔مسلم لیگ ن کے رکن اویس لغاری نے کہا حکمرانوں کو عوام کا احساس ہی نہیں،علاج ،جینا اور مرنا بھی مہنگا کردیا ہے ،حکمرانوں نے دین کو بھی نہیں چھوڑا حج بھی مہنگا کردیا گیا ہے ۔فیاض چوہان نے کہا آٹے کا بحران نہیں ہے ۔ تقریر کے دوران اپوزیشن نے حریم شاہ کے حوالے سے نعرے بازی کی ،جس پر فیاض چوہان جوابی وار میں طاہرہ سید کے طعنے دینے لگے اور کہا کہ آپ کے قائد انہیں گانے سنایا کرتے تھے ،اجلاس کا وقت ختم ہونے پر ڈپٹی سپیکر دوست محمد مزاری نے اجلاس پیر کی سہ پہر 3 بجے تک ملتوی کردیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں