آٹا بحران ، اور مہنگائی کے بعد غریب عوام کیلئے ایک اور بری خبر آگئی ،گھروں میں سب سے زیادہ استعمال ہونیوالی چیز کی قیمت میں ہوشربا اضافہ ، خبر پڑھ کر آپ افسردہ ہوجائینگے

اسلام آباد(نیو زڈیسک) غریب عوام آٹا مہنگا ہونے کے صدمے سے باہر نہیں نکلے تھے کہ منافع خوروں اور ذخیرہ اندوزوں نے چینی کے نرخ بھی بڑھا دیے ۔ لاہور ہول سیل مارکیٹ میں چینی کی قیمت میں اڑھائی روپے فی کلو کا اضافہ ہو گیا۔ شوگر ٹریڈرز ایسوسی ایشن کے مطابق سو کلو چینی کا تھیلا 7 ہزار 300 سے بڑھ کر 7 ہزار 500 روپے کا ہوگیا۔ لاہور میں چینی کی سرکاری قیمت پچھتر روپے کلو ہے۔کراچی ہول سیل مارکیٹ میں چینی 70 سے 74 روپے کلو میں فروخت ہو رہی ہے۔یاد رہے کہ ملک بھر میں آٹا کا بحران تھمنے کا نام نہیں لے رہا، پشاور، کراچی، اسلام آباد سمیت ہر جگہ آٹا نایاب ہو گیا جس کے بعد عوام کی زندگی عذاب بن کر رہ گئی ہے۔ صرف ایک ماہ کے دوران مافیا نے چکی والے آٹے کی قیمت میں 4 چار بار اضافہ کیا جس کے بعد چکی والے آٹا کی قیمت 70 روپے ہو گئی ہے۔دوسری طرف اقتصاد ی رابطہ کمیٹی (ای سی سی) نے آٹے کے بحران پر قابو پانے کے لئے 3 لاکھ ٹن گندم درآمد کرنے کی منظوری دے دی، کسانوں کو ریلیف فراہم کرنے کے لئے کھاد بھی 400 روپے بوری سستی کرنے کی ہدایت کر دی گئی۔حکام نے ای سی سی کو بتایا کہ پاسکو اور پنجاب کے پاس 41 لاکھ ٹن گندم کے ذخائر موجود ہیں، درآمدی گندم کی پہلی کھیپ 15 فروری تک پہنچ جائے گی۔ای سی سی نے ہدایت کی تین لاکھ ٹن گندم 31 مارچ تک پاکستان پہنچ جانی چاہیے۔اس سے قبل وزیراعظم عمران خان نے ملک میں مہنگائی کے مسئلے پر اجلاس بلالیا۔ عمران خان کو آٹے کے بحران سے متعلق بریفنگ دی جائے گی۔وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت وزارت فوڈ سیکیورٹی، وزارت تجارت اور صوبوں کے نمائندے شریک ہونگے۔ ذخیرہ اندوزوں کے خلاف کارروائی سے متعلق رپورٹ بھی پیش کی جائے گی، مڈل مین کا کردار ختم کرنے کی سفارشات پر عملدرآمد کا جائزہ لیا جائے گا

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں