پسند کی شادی جرم بن گئی، سسرالیوں کے تشدد سے داماد جاں بحق،واقع پاکستان کے کس شہر میں پیش آیا ؟ جانئے

مریدکے(نیوز ڈیسک) تھانہ صدر کےعلاقہ گجر ٹاؤن میں پسند کی شادی کرنے پر سسرالیو ں کے مبینہ تشدد اور تیز دھار آلہ کے وارسے داماد زندگی کی بازی ہار گیا،بھٹہ مزدور مقتول نے پانچ ماہ قبل لڑکی کے والدین کی مرضی کے خلاف کورٹ میرج کی تھی،سسرالیوں نے صلح کے بہانے گھر پر بلاکر موت کی نیند سلا دیا،پولیس نے نعش قبضہ میں لے کر پوسٹمارٹم کے لیے ہسپتال روانہ کر دی ہے۔بتایا گیا ہے کہ کالا شاہ کاکو کی آبادہ ڈیرہ چیمہ کے رہائشی بھٹہ مزدور نوجوان شہزاد وارث بھلر نے گجر ٹاؤن کے رہائشی رمضان کی بیٹی(ت) کے ساتھ پسند کی شادی کر لی اور نواحی گاؤں کےایک بھٹہ پررہنا شروع کر دیا۔ پانچ ماہ کاعرصہ گزرنے کےبعد سسرالیوں نے صلح کے بہانے اپنی بیٹی کوگھر بلایا اور بعد ازاں داماد کو بھی دعوت دے ڈالی۔اتوار کی صبح اہل علاقہ نے رمضان کا گھر کھلادیکھ کر صورتحال کا جائزہ لیا تو گھر کے اندر شہزاد وارث کی ہاتھ پاؤں بندھی نعش چار پائی پر موجود تھی اور اسے تشدد کے بعد تیز دھار آلہ کی مدد سے موت کے گھاٹ اتار دیا گیا تھاجبکہ اہل خانہ گھر سے فرار ہو چکے تھے۔پولیس نے مقتول وارث کے بھائی محرم وارث کی رپورٹ پر نعش قبضہ میں لے کر رمضان اور اس کی بیٹی(ت)کے خلاف مقدمہ درج کرکے ملزمان کی تلاش شروع کردی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں