کیون پیٹرسن کس پاکستانی کرکٹر کے حق میں بول پڑے ؟ نام بارے جان کر آپ بھی یقین نہیں کرینگے

اسلام آباد(نیوز ڈیسک)کیون پیٹرسن بھی احمد شہزاد کے حق میں بول پڑے ابھی ابھی وہ ٹیم دیکھی ہے جو پاکستان نے بنگلہ دیش کیخلاف ہوم سیریز کے لئے منتخب کی ہے، اس اسکواڈ میں احمد شہزاد کو کیوں نہیں شامل کیا گیا۔ تفصیلات کے مطابق سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر پیغام دیتے ہوئے سابق انگلش کرکٹر کیون پیٹرسن کا کہنا ہے کہ ابھی ابھی وہ ٹیم دیکھی ہے جو پاکستان نے بنگلہ دیش کو کھیلنے کے لئے منتخب کی ہے، اس سکارڈ میں احمد شہزاد کیسے شامل نہیں کیا گیا۔حلانکہ انکی ڈومیسٹک کرکٹ اور پی ایس ایل میں کارکردگی دوسروں سے بہت اچھی ہے۔یاد رہے کہ اس سے قبل پاکستان اور بنگلہ دیش کے درمیان سیریز کا شیڈول طے ہوگیاتھا ، بنگلہ دیشی ٹیم دورہ کرنے کیلئے دو ماہ میں تین مرتبہ پاکستان آئے گی ، پہلے مرحلے میں تین ٹی ٹونٹی ہونگے، دوسرے مرحلے میں واحد ٹیسٹ ہوگا ، تیسرے مرحلے میں بنگلہ دیشی ٹیم ایک ون ڈے انٹر نیشنل اورایک ٹیسٹ کھیلے گا-تفصیلات کے مطابق بنگلہ دیش کرکٹ ٹیم کے دورہ پاکستان کے حتمی معاملات طے پاگئےتھے -ذرائع کے مطابق بنگلہ دیش کرکٹ ٹیم 24 سے 27 جنوری تک لاہور میں تین ٹی ٹونٹی میچز کھیلے گی،7 سے11 فروری تک راولپنڈی میں ایک ٹیسٹ ہوگا،پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل )کے اختتام پر ایک ون ڈے انٹرنیشنل3 اپریل کو کراچی میں کھیلا جائے گا،دوسرا ٹیسٹ میچ 5 سے 9 اپریل تک کراچی میں ہوگا-چیئرمین پی سی بی احسان مانی کا کہنا تھا کہ ہم صدر آئی سی سی ششانک منوہر کی معاونت کے مشکور ہیں، پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیف ایگزیکٹو وسیم خان کا کہنا تھا کہ نئے شیڈول کی تیاری دونوں بورڈز کی جیت ہے، بنگلہ دیش کرکٹ ٹیم تین مرتبہ پاکستان آئے گی ، جو ہمارے پرامن ہونے کا ثبوت ہے-یاد رہے کہ بنگلہ دیشی کرکٹ بورڈ نے پہلے دورہ پاکستان میں ٹیسٹ سیریز کھیلنے سے انکار کردیا تھا اور صرف ٹی ٹونٹی میچز کھیلنے پر آمادگی ظاہر کی تھی-یادرہے کہ پی سی بی اور بی سی بی بنگلہ دیشی ٹیم کے دورہ پاکستان کیلئے گزشتہ روز ہی تین مرحلوں میں طے کئے گئے شیڈول پر متفق ہوئے تھے۔انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) کے چیئرمین ششانک منوہر نے اس معاملے کے حل میں اپنا کردار ادا کیا اور دونوں ممالک کے بورڈ سربراہان کی دبئی میں ہونے والی ملاقات میں یہ معاملہ طے ہوا۔ نئے شیڈول کے تحت بنگلہ دیشی ٹیم نے تین مرحلوں میں تین ٹی 20 اور دو ٹیسٹ میچوں پر مشتمل سیریز کھیلنے کے علاوہ ایک ون ڈے میچ بھی کھیلنا ہے۔ تین ٹی 20 میچوں پر مشتمل سیریز قذافی سٹیڈیم ،لاہور میں کھلی جائے گی اور ایک ٹیسٹ میچ راولپنڈی میں ہو گا جب کہ ایک ٹیسٹ اور ون ڈے انٹرنیشنل نیشنل سٹیڈیم کراچی میں کھیلیں جائیں گے۔بی سی بی کے صدر نظم الحسن نے دبئی سے بنگلہ دیش واپسی پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پی سی بی کو اس دورے کیلئے بھاری مالی نقصان کا سامنا ہے اس لئے انہوں نے ہمیں ٹیسٹ میچز سے پہلے ایک ٹی 20 میچ کھیلنے کو کہا ہے تاکہ انہیں کچھ منافع مل سکے۔ چونکہ ہم تین مرحلوں میں دورہ مکمل کر رہے ہیں اس لئے دورے کے اخراجات میں بھی اضافہ ہو گیا ہے کیونکہ کم وقت کے باعث انہیں تشہیر کا موقع بھی نہیں مل سکے گا۔ہمیں ایک پریکٹس میچ کی بھی ضرورت محسوس ہو رہی تھی اس لئے ہم نے سوچا کہ اگر ہم ایک ون ڈے میچ بھی کھیل لیں تو پریکٹس بھی اچھی ہو جائے گی۔ان کا کہنا تھا میں نے آئی سی سی کے چیئرمین ششناک منوہر سے ملاقات کیلئے وعدہ کر رکھا تھا، اس لئے میں نے جانا ہی تھا اور جب میں وہاں گیا تو پی سی بی حکام پہلے سے ہی موجود تھے جنہوں نے ہمیں بتایا کہ وہ ہمارے ساتھ مذاکرات کرنا چاہتے ہیں۔ اب یہ خبر سامنے آئی ہے کہ بنگلہ دیشی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان مشتفیق ارحیم نے پاکستان آنے سے انکار کر دیا ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں